بھارتی جیل میں ہندو انتہا پسندوں کے ہاتھوں پاکستانی قیدی قتل

ویب ڈیسک / آصف محمود  بدھ 20 فروری 2019
ہندو قیدیوں کے مشتعل ہجوم نے پاکستانی قیدی کو پتھر مار مار کر قتل کیا۔ فوٹو : فائل

ہندو قیدیوں کے مشتعل ہجوم نے پاکستانی قیدی کو پتھر مار مار کر قتل کیا۔ فوٹو : فائل

جے پور: بھارتی جیل میں انتہا پسند ہندوؤں نے پتھر مار مار کر شاکر اللہ نامی پاکستانی قیدی کو شہید کردیا۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق بھارتی ریاست راجستھان کے شہر جے پور کی جیل میں مشتعل ہندو قیدیوں نے پاکستانی قیدی شاکر اللہ کو پتھر مار کر شہید کردیا۔ بھارتی قیدیوں کے مشتعل ہجوم نے پاکستان کے خلاف نعرے بازی بھی کی۔ شاکر کو 2001 میں بھارتی ریاست گجرات سے گرفتار کیا گیا تھا اور جے پور کی سینٹرل جیل میں قید تھا.

واقعے کی اطلاع ملتے ہی اعلیٰ پولیس حکام اور فرانزک ماہرین جیل پہنچ گئے اور دو حملہ آور ہندو قیدیوں کو اپنی تحویل میں لے لیا۔ تاہم پاکستانی قیدی شاکر اللہ سے متعلق مزید تفصیلات سامنے نہیں آئیں۔ مشتعل ہندو قیدیوں نے پلوامہ حملے کے ردعمل میں پاکستانی قیدی پر حملہ کیا۔

Shakir Ullah

رواں ماہ کی 14 تاریخ کو مقبوضہ کشمیر میں خود کش حملے میں 44 بھارتی فوجیوں کی ہلاکت کے بعد بھارت نے بغیر کسی ثبوت کے حملے کا الزام پاکستان پر دھر دیا تھا جب کہ بھارتی میڈیا بھی مسلسل شہریوں کو اشتعال انگیزی پر اکسا رہا ہے۔

واضح رہے کہ بھارت کی مختلف جیلوں میں 400 سے زائد پاکستانی قید ہیں جن میں اکثریت ماہی گیروں اور غلطی سے سرحد پارکرنے والوں کی ہے جب کہ کچھ سفری دستاویزات گم ہوجانے یا معیاد سے زیادہ دن مقیم رہنے کے جرم میں قید ہیں۔



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔