سعودی عرب اور چین کے درمیان 28 ارب ڈالر کے تجارتی معاہدے

ویب ڈیسک  ہفتہ 23 فروری 2019
دونوں ممالک کے درمیان 12 بڑے معاشی معاہدوں پر دستخط ہوئے۔ فوٹو : سعودی پریس ایجنسی

دونوں ممالک کے درمیان 12 بڑے معاشی معاہدوں پر دستخط ہوئے۔ فوٹو : سعودی پریس ایجنسی

بیجنگ: سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے دورہ چین کے دوران 28 ارب ڈالر کے 12 باہمی تجارتی معاہدے طے پا گئے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان ایشیائی ممالک کے دورے پر چین پہنچے جہاں چین کے صدر شی جن پنگ سے ملاقات میں 12 معاشی معاہدوں پر دستخط ہوگئے۔ سعودی عرب چین میں 28 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کرے گا۔

تجارت، دفاع اور سیکیورٹی کے شعبوں میں ہونے والے ان معاشی معاہدوں کے بعد دونوں ممالک کے درمیان باہمی تجارتی حجم میں گزشتہ برس کے مقابلے میں 32 فیصد اضافہ ہوجائے گا۔ دونوں ممالک کے درمیان دہشت گردی کے خلاف مشترکہ حکمت عملی اپنانے پر بھی اتفاق کیا گیا۔

اس موقع پر سعوی ولی عہد کا کہنا تھا کہ چین کے ساتھ سعودی عرب کے درمیان خوشگوار تعلقات طویل عرصے بعد ایک بار پھر ماضی کی طرح مستحکم اور خوشگوار ہوسکتے ہیں اور آج اس کے لیے بہترین موقع ہے۔

چین کے صدر شی جن پنگ نے کہا کہ سعودی عرب سے مستحکم تعلقات استوار ہو رہے ہیں اور دونوں ممالک کے درمیان اسٹرٹیجک تعلقات روشن مستقبل کی ضمانت ہیں۔

واضح رہے کہ سعوی ولی عہد محمد بن سلمان ایشیائی ممالک کے دورے پر سب سے پہلے پاکستان پہنچے تھے، بعد ازاں بھارت کے مختصر دورے کے بعد چین ان کی اگلی منزل تھی۔

 



ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔