کراچی کے مختلف علاقوں میں شدید ٹریفک جام، روزہ داروں کو سڑکوں پر افطار کرنا پڑا

ویب ڈیسک  پير 5 اگست 2013
صدر،آئی آئی چندریگرروڈ، کلفٹن، شارع فیصل،عبداللہ ہارون روڈ طارق روڈ ،لیاقت آباد، گولیمار اور ناظم آباد میں شدید ٹریفک جام کے باعث سیکڑوں گاڑیاں پھنس کررہ گئی ہیں فوٹو:فائل

صدر،آئی آئی چندریگرروڈ، کلفٹن، شارع فیصل،عبداللہ ہارون روڈ طارق روڈ ،لیاقت آباد، گولیمار اور ناظم آباد میں شدید ٹریفک جام کے باعث سیکڑوں گاڑیاں پھنس کررہ گئی ہیں فوٹو:فائل

کراچی: شہر کے مختلف علاقوں میں شدید ٹریفک جام کے باعث سڑکوں پر گاڑیوں کی طویل قطاریں لگ گئیں اور مغرب ہونے کے بعد ہزاروں افراد کو سڑکوں پر ہی افطار کرنا پڑا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق کراچی کے مختلف علاقوں صدر،آئی آئی چندریگرروڈ، کینٹ اسٹیشن، گرو مندر، کلفٹن، شارع فیصل،عبداللہ ہارون روڈ، طارق روڈ ، لیاقت آباد، گولیمار اور ناظم آباد میں شدید ٹریفک جام کے باعث سیکڑوں گاڑیاں پھنس کر  رہ گئی ہیں جب کہ ڈیفنس اور کورنگی جانے والی سڑکوں پر بھی گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگی ہیں۔ ٹریفک جام کی ایک وجہ وزیر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ  کی سیکیورٹی کی غرض سے کھڑے کئے جانے والے کنٹینر ز اور شام کے اوقات میں ہیوی ٹریفک کا  سڑکو ں پر موجود ہونا  بھی ہے، مغرب ہونے کے بعد بھی گاڑیوں کی لمبی قطاریں مختلف سڑکوں پر موجود ہیں، کئی گاڑیوں میں فیول بھی ختم ہو چکا ہے اور ٹریفک جام میں پھنسے ہزاروں افراد کو اپنا روزہ سڑکوں پر ہی افطار کرنا پڑا۔

واضح رہے کہ ٹریفک پولیس نے رمضان کے لئے باقاعدہ ایک ٹریفک پلان تیار کیا تھا جس کے مطابق ہیوی ٹریفک کو شام 4 بجے کے بعد اجازت نہیں ہو گی لیکن  4 بجے کے بعد بھی ہیوی ٹریفک سڑکوں پر  باآسانی دوڑتی نظر آتی ہے جو کہ ٹریفک جام اور عوام کی مشکلات میں اضافے کا باعث ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔