جگہ جگہ گندگی کے ڈھیر، مچھروں اور مکھیوں کی یلغار

اسٹاف رپورٹر  پير 19 اگست 2013
بلدیہ عظمیٰ مالی بحران کا شکار، محدود پیمانے کچرا اٹھایا جانے لگا،کچرے کے ڈھیروں سے تعفن اٹھنا شروع،شہر کی سڑکوں، ندیوں اور نالوں میں لاکھوں ٹن کچرا جمع ہوگیا. فوٹو: پی پی آئی ، فائل

بلدیہ عظمیٰ مالی بحران کا شکار، محدود پیمانے کچرا اٹھایا جانے لگا،کچرے کے ڈھیروں سے تعفن اٹھنا شروع،شہر کی سڑکوں، ندیوں اور نالوں میں لاکھوں ٹن کچرا جمع ہوگیا. فوٹو: پی پی آئی ، فائل

کراچی: کراچی میں صفائی ستھرائی کا نظام بدستور مفلوج ہے،شاہراہوں ،سڑکوں، گلیوں اور برساتی نالوں میں کچرے کے ڈھیر کئی ماہ گزرنے کے باوجود صاف نہ کیے جاسکے۔

حالیہ بارشوں کے دوران کراچی میں تباہی کے بعد اب شہریوں پر مکھیوں اور مچھروں نے یلغار کردی ہے، سندھ حکومت کے دعوے کھوکھلے ثابت ہوئے، بلدیہ عظمیٰ کراچی اور ضلعی انتظامیہ کو بدستور فنڈز کے بحران کا سامنا ہے جس سے جراثیم کش اسپرے مہم شدید متاثر ہے اور شہر میں وبائی امراض پھوٹنے کا خطرہ ہے،تفصیلات کے مطابق سندھ حکومت کی جانب سے بلدیہ عظمیٰ کراچی اور پانچوں ضلعی کارپوریشنز کو آکٹرائے ضلع ٹیکس کی مد میں ملنے والے فنڈز سے کٹوتی کی جارہی ہے جس سے ان تمام اداروں کو شدید مالی بحران کا سامنا ہے۔

دستیاب فنڈز سے صرف ملازمین کو تنخواہیں ادا کی جارہی ہیں جبکہ انتہائی محدود پیمانے پر علاقوں سے کچرا اٹھاکر لینڈفل سائٹ پر پھینکا جارہا ہے،حالیہ بارشوں میں اسکیم 33، سعدی ٹائون، امروہہ سوسائٹی، فیڈرل بی ایریا اور دیگر علاقے زیر آب آگئے، ان علاقوں سمیت پورے شہر میں میدانوں، شاہراہوں  میں کئی دن برساتی پانی جمع رہنے سے مچھروں کی افزائش ہوئی جس سے ڈنگی کا مرض تیزی سے پھیل رہا ہے جبکہ شہر میں کچرے کے ڈھیروں  پر برساتی پانی پڑنے سے بدبو و تعفن اٹھنا شروع ہوگیا ہے اور رہائشی علاقوں اور بازاروں میں مکھیوں اور دیگر حشرات کی بہتات ہوگئی ہے جس سے ڈائریا کا مرض پھیل رہا ہے،کھانے پینے کی کھلی اشیا پر مکھیوں کے بیٹھنے سے ڈائریا، ہیضہ اور گیسٹرو جیسے وبائی امراض بڑھ رہے ہیں.

بلدیہ عظمیٰ کراچی کے ذرائع کے مطابق شہر میں وبائی امراض کو کنٹرول کرنے کیلیے شہر میں جراثیم کش اسپرے کا آغازکردیا گیا ہے تاہم شہر میں قائم کچرے کے پہاڑ اور برسات کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال سے نمٹنے کیلیے غیرمعمولی فنڈز درکار ہیں،دستیاب فنڈز سے صرف معمول کے مطابق جراثیم کش ادویہ کا اسپرے کیا جارہا ہے جس سے وبائی امراض کے پھیلائو کو کنٹرول نہیں کیا جاسکتا ہے، شہریوں نے بلدیہ عظمیٰ سے مطالبہ کیا ہے کہ صفائی ستھرائی کے نظام کو ٹھیک کرنے کیلیے اقدامات کرنے ہونگے تاکہ شہری وبائی امراض سے بچ سکیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔