فاروق ستار نے اسی شاخ کو کاٹ دیا جس پر وہ بیٹھے تھے، میئر کراچی

نمائندہ ایکسپریس  ہفتہ 20 اپريل 2019
فاروق ستار نے اپنے پیروں پر خود کلہاڑی چلائی ہے، میئر کراچی فوٹو:فائل

فاروق ستار نے اپنے پیروں پر خود کلہاڑی چلائی ہے، میئر کراچی فوٹو:فائل

 کراچی: میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ فاروق ستار نے اسی شاخ کو کاٹ دیا جس پر وہ بیٹھے تھے۔

کراچی کی انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت میں ایم کیو ایم کے قائد کی اشتعال انگیز تقاریر میں سہولت کاری کے 23 مقدمات کی سماعت ہوئی۔

ڈاکٹر فاروق ستار، عامر خان، رؤف صدیقی، وسیم اختر، قمر منصور، ریحان ہاشمی، محمود عبد الرزاق، شاہد پاشا سمیت دیگر عدالت میں پیش ہوئے۔ عدالت نے ملزموں کے وکلا کی عدم موجودگی کے باعث سماعت 18 مئی تک ملتوی کردی۔

سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو میں فاروق ستار نے میئر کراچی وسیم اختر کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ شہر میں پانی کی قلت کا مسئلہ بڑھ رہا ہے مگر کسی کی توجہ نہیں ہے، حکمران تو عوام کو مارنے کا سوچے بیٹھے ہیں۔

میئر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ کراچی پیکج کے 162 ارب روپے کے معاملے پر تذبذب کا شکار ہیں، کابینہ میں ردو بدل کے اثرات کراچی پیکج پر نہ پڑنے چاہئیں۔ انہوں نے کہا کہ مجھے 40 مقدمات میں پھنسایا گیا ہے اور سابق ایس پی ملیر راؤ انوار نے کسی  کو خوش کرنے کے لیے مجھ پر جھوٹے مقدمات بنائے۔

فاروق ستار کے سوالوں پر  ردعمل دیتے ہوئے وسیم اختر نے کہا کہ فاروق ستار کا پتہ نہیں کونسی دنیا میں رہتے ہیں، وہ واٹر بورڈ کے فنڈ کی بات کرتے ہیں جو ادارہ میرے ماتحت ہی نہیں، ان کی باتوں پر صرف ہنسی آسکتی ہے، فاروق ستار نے اسی ڈال کو کاٹ دیا جس پر وہ بیٹھے تھے اور اپنے پیروں پر خود کلہاڑی چلائی ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔