نیب نے اسپیکر سندھ اسمبلی و دیگر کیخلاف ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دیدی

ویب ڈیسک  بدھ 15 مئ 2019
ایگزیکٹوبورڈ کے اجلاس میں  12 انکوائریوں اور 3 ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی گئی، فوٹو: فائل

ایگزیکٹوبورڈ کے اجلاس میں 12 انکوائریوں اور 3 ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی گئی، فوٹو: فائل

 اسلام آباد: نیب نے اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی و دیگر کے خلاف ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دے دی جب کہ وفاقی وزیر خسرو بختیار کے خلاف انکوائری کو انویسٹی گیشن میں بدلنے کا فیصلہ پھر مئوخر کر دیا گیا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق نیب ایگزیکٹوبورڈ کا اجلاس چیئرمین جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کی زیر صدارت ہوا جس میں 12 انکوائریوں اور 3 ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی گئی۔

اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی و دیگر کے خلاف ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی گئی ہے، نیب کا کہنا ہے کہ سراج درانی و دیگرنے غیر قانونی اثاثے بنا کر خزانے کو ایک ارب60کروڑ کا نقصان پہنچایا۔

اجلاس میں سابق وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا  اکرم درانی، شیر اعظم،علی غلام نظامانی،سعید نظامانی،محمد سہیل اور دیگر کیخلاف انکوائریوں کی منظوری  دی گئی جب کہ سابق ایگزیکٹو ڈائریکٹر لوک ورثہ مظہر الاسلام و دیگر،سابق ڈائریکٹر تعلیم فاٹافضل منان و دیگرکے خلاف بدعنوانی کا ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی گئی۔

اسی طرح حافظ عبدالکریم،غلام قادر پلیجو،عبدالستار ڈیروو دیگر اور میکاٹک کمپنی کیخلاف انکوائریاں ختم کرنے کی منظوی دی گئی، اے ایم کنسٹریکشن کمپنی فیصل آباد کے مالکان کے خلاف انویسٹی گیشن ختم کرنے اور چیف ایگزیکٹو افسر کیسکورحمت اللہ بلوچ کیخلاف انکوائری متعلقہ محکمہ کو بھیجنے کی منظوری دی گئی۔

نیب ایگزیکٹوبورڈ نے وفاقی وزیر خسرو بختیار کے خلاف انکوائری کو انویسٹی گیشن میں بدلنے کا فیصلہ پھر مئوخر کر دیا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔