علی ظفرکی طرف داری پرمیشا دھمکارہی ہیں، وزیراعظم کے بھانجے کا الزام

ویب ڈیسک  جمعـء 12 جولائ 2019
میشا اوران کی ٹیم کی جانب سے انہیں دھمکیاں دی جارہی ہیں  بیرسٹر حسان نیازی فوٹوفائل

میشا اوران کی ٹیم کی جانب سے انہیں دھمکیاں دی جارہی ہیں بیرسٹر حسان نیازی فوٹوفائل

کراچی: وزیراعظم عمران خان کے بھانجے بیرسٹراورسماجی کارکن حسان خان نیازی نے گلوکارہ میشا شفیع پرالزام لگایا ہے کہ انہیں علی ظفرکی طرفداری کرنے اور میشا شفیع کی غیرملکی فنڈنگ پر سوالات اٹھانے پران کی جانب سے دھمکایا جارہا ہے۔

گلوکارہ میشا شفیع نے گزشتہ برس علی ظفرپر’می ٹو‘ مہم کے تحت جنسی ہراسانی کا الزام لگایا تھا، اس معاملے کو ایک سال سے زائد کا عرصہ گزرچکا ہے، اس وقت یہ معاملہ عدالت میں ہے تاہم اس عرصے میں اس تنازع نے کئی موڑ لیے ہیں۔

حال ہی میں وزیراعظم عمران خان کے بھانجے بیرسٹراورسماجی کارکن حسان نیازی نے گلوکارہ میشا شفیع پرالزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ میشا اوران کی ٹیم کی جانب سے انہیں دھمکیاں دی جارہی ہیں کہ وہ می ٹومہم کو میرے خلاف استعمال کرسکتی ہیں کیونکہ میں نے میشا شفیع کوملنے والی غیر ملکی فنڈنگ پر سوال اٹھائے تھے۔

حسان نیازی نے کہا میشا شفیع اپنے ذاتی مقاصد اور’پوائنٹ اسکورنگ‘ کے لیے می ٹومہم کا غلط استعمال کررہی ہیں لیکن میں یہاں واضح کرنا چاہتا ہوں کہ اگرمجھے بلیک میل کیا گیا تومیں انہیں مزید بے نقاب کروں گا۔  اس کے ساتھ ہی حسن نیازی نے اپنی ٹوئٹ میں ہیش ٹیگ ’میشا وومن کارڈ استعمال‘ کررہی ہیں بھی لکھا۔

واضح رہے کہ حسان نیازی نے میشا شفیع کو علی ظفر کے خلاف جعلی گواہ پیش کرنے پر تنقید کانشانہ بناتے ہوئے انہیں اور ان کی ٹیم کو ملنے والی غیر ملکی فنڈنگ پر سوال اٹھائے تھے۔

دوسری جانب میشا شفیع نے حسان نیازی کے ان الزامات کو رد کرتے ہوئے کہا ہے کہ میں اس شخص سے نہ کبھی ملی ہوں اور نہ ہی میں نے اس پر الزام لگایا ہے، اگرچہ اس نے مجھے گزشتہ برس پیغام بھیجا تھا لیکن مجھے یاد نہیں کہ میں نے اسے جواب دیا تھا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔