امریکا میں گرمی کی شدید لہر سے 6 افراد ہلاک، ہیٹ ایمرجنسی کا اعلان

ویب ڈیسک  اتوار 21 جولائ 2019
نیو یارک، فلاڈیلفیا اور واشنگٹن میں بھی درجہ حرارت 38 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ گیا۔ فوٹو : فائل

نیو یارک، فلاڈیلفیا اور واشنگٹن میں بھی درجہ حرارت 38 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ گیا۔ فوٹو : فائل

 واشنگٹن: امریکا میں ریکارڈ توڑ گرمی کی شدید لہر میں 6 افراد ہلاک ہوگئے جس کے بعد نیویارک میں ہیٹ ایمرجنسی نافذ کردی گئی۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکا کے مشرقی اور وسطی علاقوں میں گرمی کی شدید لہر نے لوگوں کو بے حال کر دیا، ساحل سمندر اور سوئمنگ پول پر لوگوں کا جمع غفیر جمع ہوگیا۔ نیو یارک، فلاڈیلفیا اور واشنگٹن میں بھی درجہ حرارت 38 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ چکا۔

Heat Wave America 2

اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کر دی گئی ہے، نیویارک میں 2 درجن سے زائد افراد کو اسپتال لایا گیا ہے، ہیٹ ویو کا شکار ہو کر مجموعی طور پر 6 افراد اپنی جانوں سے گئے جس پر نیویارک کے میئر نے ہیٹ ایمرجنسی نافذ کردی۔

Heat Wave America 6

امریکی محکمہ موسمیات نے گرمی کی اس لہر کو خطرناک قرار دیتے ہوئے متاثرہ علاقوں کے شہریوں کو احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کی ہدایت کی ہے اور لوگوں کو بلا ضرورت گھر سے باہر نکلنے سے منع کیا ہے۔

Heat Wave America 4

شاہراہوں اور پارکوں میں پائپ کے ذریعے شہریوں پر پانی برسایا جا رہا ہے جب کہ ٹریفک پولیس نے سر ڈھانپے بغیر سفر نہ کرنے کی ہدایت کی ہے ساتھ ہی ہیٹ ویو سے آگاہی کے لیے پمفلٹ بھی تقسیم کیے۔

Heat Wave America 5

محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ تپتی دھوپ اور بڑھتا ہوا درجہ حرارت مزید دو دن جاری رہیں گے۔ تمام بڑے شہروں کے میونسپل اداروں کو اس حوالے سے الرٹ جاری کردیا گیا ہے۔

Heat Wave America 3

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔