منی لانڈرنگ کیس؛ آصف زرداری اور فریال تالپور احتساب عدالت میں پیش

ویب ڈیسک  پير 22 جولائ 2019
فریال تالپور کے جسمانی ریمانڈ میں 7 روز کی توسیع فوٹو:فائل

فریال تالپور کے جسمانی ریمانڈ میں 7 روز کی توسیع فوٹو:فائل

 اسلام آباد: قومی احتساب بیورو( نیب) نے منی لانڈرنگ کیس میں آصف زرداری اور فریال تالپور کو احتساب عدالت میں پیش کردیا۔

احتساب عدالت اسلام آباد میں میگا منی لانڈرنگ کیس کی سماعت ہوئی تو نیب حکام نے آصف زرداری اور فریال تالپور کو عدالت میں پیش کیا۔

آصف زرداری کے خلاف وعدہ معاف گواہ نورین سلطان اور کرن امان نے حاضری سے استثنی کی درخواست کرتے ہوئے کہا کہ ہر پیشی پر کراچی سے اسلام آباد نہیں آسکتے۔ عدالت نے وعدہ معاف گواہ نورین سلطان کی استدعا منظور کرلی۔

عدالت کے استفسار پر نیب پراسکیوٹر نے بتایا کہ کیس میں دونوں خواتین کے وعدہ معاف گواہ بننے کی درخواست پر کارروائی جاری ہے۔ وکیل فاروق ایچ نائک نے ملزمان آصف علی زرداری اور فریال تالپور سے ملاقات کی درخواست کی جو منظور کرلی گئی۔

عدالت نے فریال تالپور کے جسمانی ریمانڈ میں 7 روز کی توسیع کرتے ہوئے 29 جولائی کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دیا۔

دوران سماعت آصف علی زرداری روسٹرم پر آگئے اور کچھ اخباری تراشے عدالت میں پیش کرتے ہوئے کہا کہ نیب کے مشیر شہزاد اکبر کہتے ہیں کہ میری 32 بے نامی جائیدادیں ہیں، شہزاد اکبر کو عدالت میں طلب کرکے اس الزام کے بارے میں ان سے پوچھا جائے،  جج محمد بشیر نے تراشے آصف زرداری کے وکیل کو دے کر کہا کہ آپ یہ پڑھ لیں اور قانون کے تحت درخواست دیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔