چین میں لینڈ سلائیڈنگ سے کم ازکم 30 افراد ہلاک

ویب ڈیسک  اتوار 28 جولائ 2019
چین کے جنوب مغربی دیہات میں لینڈ سلائینڈنگ سے کم از کم 30 افراد ہلاک اور ایک درجن سے زائد لاپتہ ہوگئے ہیں۔ فوٹو: اے ایف پی

چین کے جنوب مغربی دیہات میں لینڈ سلائینڈنگ سے کم از کم 30 افراد ہلاک اور ایک درجن سے زائد لاپتہ ہوگئے ہیں۔ فوٹو: اے ایف پی

بیجنگ: چین کے جنوب مغربی علاقے میں پہاڑوں سے مٹی کے تودے پھسلنے سے کم ازکم 30 افراد ہلاک ہوگئے ہیں ۔ دوسری جانب مزید لاپتہ افراد کی تلاش بھی جاری ہے۔ تاہم بعض ذرائع نے ہلاک اور لاپتہ ہونے والوں کی تعداد اس سے زیادہ بتائی ہے۔

واقعہ منگل کے روز چین کے صوبے گوائی زو کے ایک دیہات میں پیش آیا جہاں پہاڑوں سے پتھر گرے اور لینڈ سلائیڈنگ ہوئی جس کے نتیجے میں پہاڑ کے دامن میں موجود 20 گھر ملبے تلے دب گئے، آخری اطلاعات تک امدادی عملہ ملبے کو ہٹانے کی کوشش کررہا تھا۔

مرنے والے میں دو بچے ، ایک شیرخوار اور اس کی ماں بھی شامل ہیں۔ چین کی زنہوا نیوز ایجنسی نے ہفتے کے روز 29 افراد کے مرنے کی تصدیق کی تھی لیکن مزید 22 افراد کے لاپتہ ہونے کی خبر دی تھی۔ امدادی کارکنان نے اب تک 40 افراد کو بحفاظت نکال لیا ہے اور ہنگامی حالت کا نفاذ کردیا ہے۔

مقامی اسکول میں طبی امداد کا مرکز کھول دیا گیا ہے جہاں مختلف ماہرین اور رضاکار شامل ہیں۔ حکومت نے فوری طور پر 44 لاکھ ڈالر کی رقم جاری کردی ہے جو لوگوں کو بچانے اور انہیں بحفاظت محفوظ مقامات تک منتقل کرنے کے لیے خرچ کی جائے گی۔

چین میں آئے دن لینڈ سلائیڈنگ سے جانی و مالی نقصان ہوتا رہتا ہے اور اسی صوبے میں 2017 میں تودے پھسلنے سے 30 افراد لقمہ اجل بن گئے تھے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔