عوام غیر حقیقی منافع کا لالچ دینے والی اسکیموں سے گمراہ نہ ہوں،ایس ای سی پی

نمائندہ ایکسپریس  منگل 30 جولائ 2019
کمپنیاں سرمایہ کاری اور کاروبار کی فنانسنگ کے نام پرصارفین کو سرمایہ کاری کے عوض متاثر کن ریٹرن کا لالچ دیتے ہیں۔ فوٹو: فائل

کمپنیاں سرمایہ کاری اور کاروبار کی فنانسنگ کے نام پرصارفین کو سرمایہ کاری کے عوض متاثر کن ریٹرن کا لالچ دیتے ہیں۔ فوٹو: فائل

 اسلام آباد:  سیکیورٹیزاینڈ ایکس چینج نے عوام کو خبردارکیا کہ غیر حقیقی منافع اور رعایتوں کا لالچ دینے والی اسکیموں سے گمراہ نہ ہوں۔

ایس ای سی پی کے اعلامیہ میں بتایا گیا کہ پاک میمن ایمپکس (پرائیویٹ) لمیٹڈ اور میمن کارپوریشن (پرائیویٹ) لمیٹڈ گاڑیوں، مکانات، الیکٹرانکس وغیرہ کی لیزنگ کے غیر قانونی اور غیر منظور شدہ کاروبار میں ملوث ہے۔

علاوہ ازیں یہ کمپنیاں سرمایہ کاری اور کاروبار کی فنانسنگ کے نام پرصارفین کو سرمایہ کاری کے عوض متاثر کن ریٹرن کا لالچ دیتے ہیں جبکہ صارفین کی جانب سے طے شدہ ڈاون پیمنٹ پر 5سالہ لیزنگ پلان بھی دیتے ہیں، لہذا عوام کو آگاہ کیا جاتا ہے کہ ایسی کاروباری سرگرمیاں ممنوع ہیں اور صرف اور صرفریگولیٹری ادارے کی جانب سے لائسنس ہونے پر قانونی شرائط و ضوابط کے مطابق ہی ایسی کاروباری سرگرمیاں انجام دی جا سکتی ہیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔