افغانستان میں مسافر بس کے نزدیک بم دھماکے میں 34 مسافر ہلاک

ویب ڈیسک  بدھ 31 جولائ 2019
بم دھماکا اس وقت ہوا جب مسافر بس وہاں سے گزر رہی تھی۔ فوٹو : فائل

بم دھماکا اس وقت ہوا جب مسافر بس وہاں سے گزر رہی تھی۔ فوٹو : فائل

کابل: افغانستان میں سڑک کنارے نصب بم اُس وقت دھماکے سے پھٹ گیا جب وہاں سے ایک مسافر بس گزر رہی تھی جس کے نتیجے میں 34 مسافر ہلاک اور 17 زخمی ہوگئے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق افغانستان کے مغربی صوبے فراہ میں ہرات ہائی وے پر نصب بم اُس وقت دھماکے سے پھٹ گیا جب ایک مسافر بردار بس وہاں سے گزر رہی تھی جس کے نتیجے میں بس میں سوار 34 مسافر ہلاک اور 17 زخمی ہوگئے۔

ریسکیو اداروں نے امدادی کاموں کا آغاز کرتے ہوئے ہلاک اور زخمی ہونے والوں کو قریبی اسپتال منتقل کیا، 10 زخمیوں کی حالت نازک ہونے کے باعث ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔ ہلاک اور زخمی ہونے والوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔

یہ خبر بھی پڑھیں : افغان شہریوں کی بڑی تعداد طالبان کے بجائے مقامی اور نیٹو افواج کے ہاتھوں ہلاک ہوئی، اقوام متحدہ

پولیس کا کہنا ہے کہ مسافر بس فراہ سے ہرات کی جانب جا رہی تھی کہ شاہ ویز کے علاقے میں دھماکے کا شکار ہوگئی، بس میں خواتین اور بچے بھی سوار تھے۔ بم دھماکے کا ہدف یہی مسافر بس تھی۔ تاحال بس کو ہدف بنانے کی وجہ کا تعین نہیں کیا جا سکا ہے اور کسی گروپ نے ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

واضح رہے کہ اقوام متحدہ کی جانب سے گزشتہ روز ایک رپورٹ جاری کی گئی ہے جس میں انکشاف کیا گیا تھا کہ رواں برس کے پہلے حصے میں 1300 سے زائد شہری نیٹو اور اتحادی افواج کے ہاتھوں ہلاک ہوئے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔