عدالتی فیصلے نے مفلوج کردیا،کرکٹ جج چلائیں یا ہم چلالیں، نجم سیٹھی

مانیٹرنگ ڈیسک  بدھ 18 ستمبر 2013
مصباح کو نہیں ہٹائیں گے، کارکردگی اچھی نہ ہو تو اس کا مطلب یہ نہیں کہ زلزلہ آجائے. فوٹو: فائل

مصباح کو نہیں ہٹائیں گے، کارکردگی اچھی نہ ہو تو اس کا مطلب یہ نہیں کہ زلزلہ آجائے. فوٹو: فائل

لاہور:  پاکستان کرکٹ بورڈ کے نگران چیئرمین نجم سیٹھی نے کہا کہ عدالتی فیصلے کی وجہ سے مفلوج ہوں، کرکٹ کو ججز چلائیں یا ہم چلالیں، میڈیا سے گفتگو میں انھوں نے کہا کہ یہ تاثر درست نہیں کہ میں اپنی مدت بڑھانے کیلیے کوشاں ہوں۔

میرے پاس اختیارات ہی نہیں، آپ کا کیا خیال ہے کہ ایسے کرکٹ چل سکتی ہے؟ ہم کرکٹ چلائیں یا پھر ججز چلائیں۔ میرے پاس سلیکشن کمیٹی بنانے اور چیف سلیکٹر بنانے کے اختیارات بھی نہیں، ایک عدالتی فیصلے کی وجہ سے مفلوج ہوں، ہم نے اپیل بھی کی ہے، مگر وہ سنی نہیں جا رہی۔ امید ہے 23 ستمبر کو ڈویژن بنچ بیٹھے اور ہماری بات سنے گا، اگر اس روز بھی سماعت نہ ہوئی تو پھر میں وزیر اعظم کے پاس جائوں گا اور کہوں گاکہ معاملات سنبھال لیں اور میں عہدہ چھوڑ دوں گا۔ ایکسپریس نیوز کے مطابق انکا کہنا تھا کہ میں چاہتا ہوں کہ عدالت بیٹھے اور فیصلہ کرے مگر عدالت بیٹھ نہیں رہی۔

پہلے ہمیں کہا کہ ہم بیٹھ جائیں گے، 23ستمبر کی تاریخ ملی ، پھر اب پتہ چلا ہے کہ جج حضرات حج پر جا رہے ہیں۔ عدالت بیٹھ ہی نہیں رہی ، ہم نے پرانا فیصلہ چیلنج کیا ہے مگر کوئی ہماری بات سنے تو بات ہے نا۔ اس وقت میرے پاس کوئی اختیارات ہی نہیں، کیا خیال ہے کہ ایسے کرکٹ چل سکتی ہے؟ انھوں نے مزید کہا کہ مصباح الحق کی تبدیلیپر بات نہیں ہوئی، وہ ذمہ دار شخص ہیں، اگر کارکردگی اچھی نہ ہو تو اسکا مطلب یہ نہیں کہ زلزلہ آجائے اور سب کچھ تبدیل کر دیا جائے ، ایسے نہیں ہوتا، ہار جانے پر شور مچانا زیادتی ہے، شور مچانے والے چار پانچ لوگ باہر بیٹھے ہیں ،انہیں روٹی شوٹی اور ملازمت چاہیے، میں ادھر نہیں جائوں گا۔

ہار جائیں تو میڈیا بھی تنقید کرتا ہے۔ جنہیں حقیقت کا پتہ ہی نہیں وہ تنقید کر رہے ہیں۔ جنوبی افریقہ کے خلاف سیریز کے لیے8 دس روز میں ٹیم کو حتمی شکل دیدی جا ئے گی۔ بھارت کو پیغام بھیجا ہے کہ ہم کرکٹ کھیلنا چاہتے ہیں جس پر بھارتی کرکٹ بورڈ کے شری نواسن اگلے ماہ مجھ سے ملاقات کر سکتے ہیں، اور بھی خوشخبریاں ہیں ، ہم دیگر ملکوں کے ساتھ بھی رابطے میں ہیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔