کتے کے لعاب سے بیمار ہونے والی مالکن ہاتھ پاؤں سے محروم

ویب ڈیسک  اتوار 4 اگست 2019
کتے کے لعاب سے خطرناک جراثیم خاتون کے جسم میں داخل ہوا (فوٹو : ٹویٹر)

کتے کے لعاب سے خطرناک جراثیم خاتون کے جسم میں داخل ہوا (فوٹو : ٹویٹر)

اوہائیو: امریکا میں پالتو کتے کے لعاب دہن سے خطرناک جراثیم مالکن کے جسم میں منتقل ہوگیا جسے روکنے کے لیے مالکن کے دونوں ہاتھ اور پاؤں کاٹنے پڑے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی ریاست اوہائیو کی رہائشی خاتون کو اچانک شدید بخار اور جسم میں درد کی شکایت ہوئی جس کے بعد وہ آہستہ آہستہ کومے میں چلی گئیں اور 10 دن تک بے ہوش رہیں۔

بے ہوشی کے دوران بیماری کی تشخیص کے لیے ٹیسٹ کیے جاتے رہے اور بالآخر انکشاف ہوا کہ خاتون ایک خاص اور نہایت کم پائے جانے والے انفیکشن کا شکار ہوئی ہیں جو capnocytophaga canimorsus  کے باعث ہوتا ہے۔

خاتون کا انفیکشن تیزی سے پھیل رہا تھا اور ان کی جلد کا رنگ گہرا سرخ ہوتا جا رہا تھا جب کہ جلد پر گنگرین جیسے ابھار بھی بننے لگے جو خون میں کلاؤٹنگ کی وجہ سے بن رہے تھے۔ خاتون کو capnocytophaga بیماری ان کے جرمن شیفرڈ کتے کے لعاب سے لگی تھی۔

معالجین نے بیماری کے تیزی سے پھیل جانے اور خطرناک صورت حال اختیار کرجانے کے باعث خاتون کے دونوں ہاتھوں کو کلائیوں تک اور دونوں پاؤں کو گھٹنوں تک ایک آپریشن کے دوران کاٹ دیا۔

خاتون کی حالت اب خطرے سے باہر ہے تاہم وہ جب ہوش میں آئیں تو اپنے ہاتھ پاؤں نہ دیکھ کر شدید ڈپریشن میں چلی گئیں ایسے کٹھن وقت میں ان کے شوہر ، اہل خانہ اور دوستوں کے ساتھ نے انہیں دوبارہ زندگی بخشی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔