مسئلہ کشمیر کا حل صرف اقوام متحدہ کی قراردادوں کےمطابق کیا جائے، سعودی عرب

ویب ڈیسک  جمعرات 8 اگست 2019
مقبوضہ کشمیر میں موجودہ خراب حالات کی وجہ بھارتی آئین کے آرٹیکل 370 کی منسوخی ہے۔ فوٹو: فائل

مقبوضہ کشمیر میں موجودہ خراب حالات کی وجہ بھارتی آئین کے آرٹیکل 370 کی منسوخی ہے۔ فوٹو: فائل

ریاض: سعودی وزارت خارجہ نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر کا حل صرف اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق کیا جائے۔ 

العربیہ ڈاٹ نیٹ پر شائع شدہ ایک خبر کے مطابق، سعودی عرب کی سرکاری خبر رساں ایجنسی ’’ایس پی اے‘‘ نے ریاض میں سعودی دفترِ خارجہ کے ایک عہدیدار کا بیان جاری کیا ہے جس میں آرٹیکل 370 کو جموں و کشمیر کےلیے خودمختاری کی ضمانت قرار دیا گیا ہے۔

’’سعودی عرب جموں و کشمیر کے موجووہ حالات پر نظر رکھے ہوئے ہے، جس کی وجہ بھارتی آئین کے آرٹیکل 370 کی منسوخی ہے۔ آرٹیکل 370 جموں وکشمیر کےلیے خودمختاری کی ضمانت ہے،‘‘ بیان میں واضح کیا گیا۔

سعودی عرب نے اپنے مؤقف کا اعادہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ خطے میں امن و استحکام کی حفاظت اور کشمیریوں کے مفادات کا تحفظ کیا جائے۔ مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے سعودی حکومت نے زور دیا ہے کہ تنازع کشمیر کا پر امن حل بین الاقوامی قراردادوں کی روشنی میں نکالا جائے۔

اس خبر کو بھی پڑھیں: بھارت نے پاکستان کے خلاف کارروائی کی تو پھر جنگ ہوگی، وزیراعظم

واضح رہے کہ گزشتہ روز (7 اگست 2019 کو) پاکستانی وزیراعظم عمران خان نے سعودی ولی عہد، نائب وزیراعظم اور وزیر دفاع شہزادہ محمد بن سلمان سے ٹیلی فون پر رابطہ کیا تھا اور انہیں کشمیر کی صورتحال سے آگاہ کیا تھا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔