رنگ کھولیں شخصیت کے راز

 پير 9 ستمبر 2019
رنگ کائنات کے حسن کا نکھار ہیں

رنگ کائنات کے حسن کا نکھار ہیں

رنگ کائنات کے حسن کا نکھار ہیں۔ ان رنگوں کی بدولت اس کرہِ ارض پر بہار چھائی رہتی ہے۔ رنگوں سے متعلق مختلف قیاس موجود ہیں۔ انھیں کبھی خوشیوں سے جوڑا جاتا ہے تو کبھی دکھوں سے۔کسی نے رنگوں کے بارے میں کیا خوب کہا ہے کہ  ’’رنگ وہ طاقت ہے جو براہِ راست دل پر اثر کر تی ہے‘‘۔رنگوں کا استعمال مختلف جگہ کیا جاتا ہے ۔ چاہے کپڑے ہوں یا جوتے، پرس ہو یا جیولری، دیواروں کا پینٹ ہو یا بیڈ شیٹ ہر جگہ رنگوں کے انتخاب کو فوقیت دی جاتی ہے۔یہ انتخاب ذاتی پسند و نا پسند کی بنیاد پر کیا جاتا ہے ۔ آج ہم آپ کو بتاتے ہیں کہ رنگوں کے انتخاب کے پیچھے کیا راز کارفرما ہیں۔

نیلا رنگ:نیلا رنگ پہننے والے افراد کو کبھی ناکامی نہیں ہوتی، بھلا کیسے؟ اور کہاں؟ جی تو آپ کے ذہن میں اٹھنے والے اس سوال کا جواب یہ ہے کہ وہ افرادجو جاب انٹرویو کے لیے نیلے رنگ کا انتخاب کرتے ہیں ان کی کامیابی یقینی ہے۔ 2013ء میں کیریئر بلڈرز کی جانب سے کی جانے والی تحقیق سے معلوم ہوا کہ بڑی بڑی کمپنیوں میں منیجر کی پوسٹ حاصل کرنے والے افراد انٹرویو کے لیے نیلے رنگ کی شرٹس پہن کر آئے تھے۔ اس سروے کا مقصد دراصل کیریئر میں کامیابی حاصل کرنے کے طریقے جاننا تھا اور اس سلسلے میں کامیاب لوگوں سے معلومات حاصل کرنے کے دوران یہ معلوم ہوا کہ انٹرویو کے لیے جاتے ہوئے نیلی شرٹ اور بلیک یا سکن ڈریس پینٹ سامنے والے پر بہت اچھا تاثر ڈالتی ہے۔ اب سوچنے کی بات یہ ہے کہ نیلے رنگ سے اس قدر مثبت جذبات کیسے منسلک ہوئے؟

دراصل یہ سب کلر سائیکالوجی کا کمال ہے۔ ڈیزائن ود سائنس اور امریکی سائیکالوجیکل ایسوسی ایشن کے رکن ڈاکٹر سالے آگسٹن نے بتایا کہ ’’نیلا رنگ دنیا میں سب سے زیادہ پسند کیا جاتا ہے اور اسے ایمانداری، اعتماد اور قابلیت سے تعبیر کیا جاتا ہے۔ یہ رنگ صرف جاب حاصل کرنے سے بڑھ کر معنی رکھتا ہے۔‘‘

نارنجی رنگ:آپ یہ جان کر حیران ہوں گے کہ مرکز نگاہ بننے والے نارنجی رنگ کو پسند کرنے والے افراد کی شادی کامیاب نہیں ہوتی۔ جی ہاں یہ کوئی قیاس نہیں بلکہ یہ کہنا ہے رنگوں کے ماہر فبر بیرن کا جنہوں نے رنگوں پہ تحقیق کر رکھی ہے۔ انکے مطابق اس رنگ کو پسند کرنے والے لوگ شادی کے حوالے سے سنجیدہ نہیں ہوتے اور اگر شادی کر لیتے ہیں تو وہ زیادہ دیر چل نہیں پاتی۔اس کی ایک بڑی وجہ ان کی زندگی کے حوالے سے غیر سنجیدگی ہوتی ہے۔ یہ ہمیشہ لوگوں کی نگاہوں کا مرکز رہنا چاہتے ہیں اور جود کو جاذب نظر ثابت کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔یہ عمومی طور پہ دوستانہ مزاج کے حامل ہوتے ہین مگر بات بات پہ بھڑکنے اور اشتعال انگیزی کا مظاہرہ کرنے کے سبب دوستوں کو کھو دیتے ہیں۔

سرخ رنگ:عمومی طور پر قربانی، خطرات اور جرأت سے وابستہ کیے جانے والا سرخ رنگ دنیا بھر میں پسند کیا جاتا ہے۔ اگر رنگوں کو نفسیات کی نظر سے دیکھا جائے تو سرخ رنگ انتہائی دلچسپ ہے۔ اس کے بارے میں یہ خیال ہے کہ سرخ رنگ طاقت کی علامت ہے۔

آنکھوں کو بھلا لگنے والا یہ رنگ پہننے والے کی شخصیت کے حوالے سے بھی مختلف خیالات کا باعث بنتا ہے۔ اسی رومانویت سے منسلک کیا جاتا ہے۔ جیسے سرخ گلاب دنیا میں محبت کے اظہار کی علامت سمجھا جاتا ہے۔ ویسے ہی ایک دلچسپ بات یہ ہے کہ ترکی میں اگر کوئی لڑکی سرخ لباس، جوتے اور لپ سٹک لگا کر باہر نکلتی ہے تو اس کا مطلب یہ لیا جاتا ہے کہ وہ کسی کا ساتھ چاہتی ہے۔ اسی طرح عروسی ملبوسات میں ہمیشہ سرخ کا انتخاب کرنے کے پیچھے بھی رومانوی خیالات بیدار کرنے کا اہتمام کرنا مقصود ہوتا ہے۔ خصوصی طور پر جنوب مشرقی ایشیاء میں دلہن کے لیے سرخ لباس کو ہی چنا جاتا ہے اور اسے سہاگن ہونے کی علامت سمجھا جاتا ہے۔

گو کہ ضروری نہیں کہ یہ رنگ اچھے نصیبوں کی ضمانت ہو۔ سرخ رنگ جہاں بہت سی خواتین کے حسن کو دوبالا کردیتا ہے اور خاص موقعوں پر ان کی کشش بڑھا دیتا ہے ونہی یہ کچھ مواقع پہ پہننا موزوں نہیں جیسے کی جاب پہ پہننے کے لیے یہ رنگ آنکھوں کو بھلا لگنے کے بجائے برا لگتا ہے اور ایک نارمل لک دینے کا کام بالکل نہیں کرتا جوکہ کسی بھی جاب کرنے والے مرد یا خاتون کے لیے درست امر نہیں۔ رنگوں کی نفسیات میں سرخ رنگ شدت کو ظاہر کرتا ہے۔ اس کا مقصد دوسروں کو اپنی جانب متوجہ کرنا ہے۔ آپ کی نظر سے ایسے بہت سے برانڈ گزرے ہوں گے جن کا سرخ رنگ آپ کو اپنی جانب کھینچتا ہوگا۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ سرخ رنگ بھوک کو بڑھتا ہے اسی لیے آپ نے بہت سے  Fast Foot ریسٹورنٹس میں کلر تھیم Red ہی دیکھی ہوگی۔

سیاہ رنگ:سیاہ رنگ کا ملبوس شاہی لباس کا حصہ رہا۔ اس رنگ کو طاقت، پراسراریت، شجاعت، اقتدار، شائستگی اور نفاست کی علامت سمجھا جاتا ہے۔ سیاہ رنگ میں ایک عجب سی کشش ہے ایسے پہننے سے طمانیت کا احساس ملتا ہے۔ عموماً خواتین سیاہ رنگ کا لباس پہننا بے حد پسند کرتی ہیں۔ سیاہ وہ واحد رنگ ہے جو ہر رنگت پر جچتا ہے۔ وہ لوگ جو فطرتاً سنجیدہ مزاج، خاموش طبع اور کچھ حد تک گہرے ہوتے ہیں۔ سیاہ رنگ پہننا پسند کرتے ہیں۔ کچھ لوگوں کے خیال میں سیاہ رنگ پہننے سے شخصیت میں اعتماد جھلکتا ہے۔ جہاں سیاہ رنگ سے کسی کی شخصیت کے بارے میں مثبت اندازے لگائے جاتے ہیں۔ وہیں سیاہ رنگ استعمال کرنے والوں کو اداس، دل گرفتہ، دکھی اور تنہا بھی سمجھا جاتا ہے۔ سیاہ رنگ کو مغربی ممالک میں موت اور دکھ سے تعبیر کیا جاتا ہے۔ اس رنگ سے منفی اور مثبت دونوں طرح کی رائے قائم کی جاسکتی ہے مگر اس کا انحصار سامنے والے کی شخصیت کے مختلف پہلوؤں سے لگا کر ہی کرنا بہتر ہوگا۔

زرد رنگ:زرد رنگ کے بارے میں عموماً یہ قیاس کیا جاتا ہے کہ یہ رنگ انتظار کی علامت ہے۔ مگر آپ کو یہ جان کر حیرت ہوگی کہ زرد رنگ کو پسند کرنے والے لوگ پر امید، خوش مزاج مگر کافی حد تک جھگڑالو واقع ہوتے ہیں۔ ایک طرف تو اس رنگ کو پسند کرنے والے افراد کی شخصیت میں تازگی، مثبت انداز فکر، اپنے مقصد سے آگاہی، ذہانت، وفاداری اور تقدس کا عنصر پایا جاتا ہے مگر دوسری طرف یہ بزدلی اور دغا بازی کا مظاہرہ کرتے ہیں۔

زرد رنگ کے بارے میں مختلف ممالک میں مختلف نظریات وابستہ ہیں۔ جیسے مصر میں اسے موت کی علامت، جاپان میں طاقت و شجاعت اور انڈیا میں بیوپار کی علامت سمجھا جاتا ہے۔

سبز رنگ:عموماً لوگوں کا یہ خیال ہوتا ہے کہ سبز رنگ کو پسند کرنے والے قدرت کے قدردان ،سبزے کو پسند کرنے والے ہوں گے مگر حیرت انگیز طور پہ یہ لوگ اپنے سے جڑے رشتوں خصوصاً منگیتر یا شریکِ حیات کے حوالے سے خدشات کا شکار رہتے ہیں۔ان کی سب سے بڑی خواہش دوسروں میں ممتاز ہونا ہے جبکہ دوسرے انہیں کس نگاہ سے دیکھتے ہیں یہ انکے لئے بہت معنی رکھتا ہے۔کامیاب ہونا، دولت حاصل کرنا اور معاشرے میں اپنا نام بننا انکی اہم ترین خواہش ہوتی ہے۔ ان کو لوگوں میں رہنا بے حد پسند ہوتا ہے۔

سفید رنگ:سفید رنگ کو پاکیزگی کی علامت سمجھا جاتا ہے۔ جو لوگ سفید رنگ پہننا پسند کرتے ہیں وہ عموماً صفائی پسند ، معصوم، نیک نیت، ذہین، دوسروں کو سمجھنے والے، روحانیت کی جانب راغب، مخلص، نرم خو اور پرفکشن کے قائل ہوتے ہیں۔

بھورا رنگ:بھورے یا براون کلر کو پسند کرنے والے افراد نہایت کفایت شعارہوتے ہیں اور فضول خرچی کو بالکل پسند نہیں کرتے۔ ایسے افراد زندگی میں آنے والی تبدیلیوں کو جلد قبول کر لیتے ہیں۔ یہ قابلِ اعتماد ، کفایت شعار ، براہ  راست کلام کرنے والے مگر دوسروں کی حوصلہ شکنی کرنے والے ہوتے ہیں۔

گلابی رنگ:گلابی رنگ ویسے تو خواتین میں بہت مقبول ہے ،مگر کیا آپ جانتے ہیں کہ اس رنگ کو پسند کرنے والے افراد کی نفسیاتی طور پر یہ خواہش ہوتی ہے کے وہ دنیا کی تلخیوں سے دور رہیں اور سنجیدگی کا لبادہ اوڑھنے سے گریز کریں۔ جی دراصل اس رنگ کو پسند کرنے والے افراد کو اپنے بچپن میں ہی رہنے کی خواہش ہوتی ہے۔یہ فطرتاً سادہ لوح، حساس اور دوسروں کو پناہ دینے والے ہوتے ہیں۔

جامنی رنگ:جامنی رنگ کو صدیوں سے شرافت، عزت اور وقار سے منسلک کیا جاتا ہے۔اس رنگ کو پسند کرنے والے افراد تخلیقی صلاحیتوں اور منفرد خصوصیات کے حامل ہوتے ہیں۔ عمومی طور پر دوسروں کو عزت دیتے ہیں مگر بعض اوقات انکے مزاج میں غرور کا عنصر نمایاں ہوتا ہے۔ ایسے افراد دینا کو اپنے نظر یات سے دیکھتے اور پرکھتے ہیں جس سے انھیں پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ یہ دنیا داری کے بجائے روحانیت کو ترجیح دیتے ہیں۔

گرے رنگ:سیاہ اور سفید کے درمیان گرے اپنی منفرد پہچان رکھتا ہے۔ اس رنگ کو پسند کرنے والے افراد کسی حد تک جذبات سے عا ری،مردم بیزار، رابطہ نہ رکھنے والے اور ناہموار شخصیت کے حامل ہوتے ہیں۔ یہ کسی سے بھی وابستگی اختیار کرنے سے خوافزدہ ہوتے ہیں۔ دنیا کو بے اعتباری کی نظر سے دیکھنا انکا شیوہ ہوتا ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔