بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی میں 3 کشمیری نوجوان شہید

ویب ڈیسک  پير 20 جنوری 2020
نوجوانوں کو ضلع شوپیاں میں سرچ آپریشن کے دوران شہید کیا گیا، فوٹو : فائل

نوجوانوں کو ضلع شوپیاں میں سرچ آپریشن کے دوران شہید کیا گیا، فوٹو : فائل

 سری نگر: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے نام نہاد سرچ آپریشن کے دوران فائرنگ کر کے 3 کشمیری نوجوانوں کو شہید کر دیا۔

کشمیر میڈیا سرس کے مطابق جنت نظیر وادی کے ضلع شوپیاں میں مسلح قابض بھارتی فوج نے داخلی اور خارجی راستوں کو بند کر کے سرچ آپریشن کے نام پر چادر اور چار دیواری کے تقدس کو پامال کرتے ہوئے گھر گھر تلاشی لی۔

سرچ آپریشن کے دوران جارحیت پسند بھارتی فوج نے ایک مکان کو بارودی مواد سے تباہ کردیا جب کہ اندھا دھند فائرنگ کرکے 3 کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا۔ جنگی جنون میں مبتلا قابض فوج نے لاشیں بھی لواحقین کے حوالے نہیں کیں۔

یہ خبر بھی پڑھیں: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجی کی خودکشی

مودی سرکار کی کٹھ پتلی انتظامیہ نے روایتی ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے نوجوانوں کو دہشت گرد ثابت کرنے کی ناکام کوشش کی تاہم ہر بار کی طرح اس بار بھی بھارتی فوج کے جھوٹ کا پردہ فاش ہوگیا۔

یہ خبر پڑھیں : بھارتی فوج کے بیس پر برفانی تودا گرنے سے ایک اہلکار ہلاک، درجنوں زخمی

غیور کشمیری عوام نے نوجوانوں کی شہادت پر شدید احتجاج کرتے ہوئے ضلع کی مرکزی شاہراہ کو بند کردیا اور قابض بھارتی فوج کیخلاف شدید نعرے بازی کی۔ مظاہرین نے جدوجہد آزادی کے حق میں بھی نعرے بلند کیے جس پر قابض فورس نے تلملاتے ہوئے مظاہرین پر آنسو گیس کی شیلنگ اور ہوائی فائرنگ کرکے درجنوں کو زخمی کردیا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔