افغانستان میں طالبان جنگجوؤں کا فوجی چیک پوسٹ پر حملہ، 14 اہلکار ہلاک  

ویب ڈیسک  پير 17 فروری 2020
افغان فوجی اہلکاروں اور طالبان جنگجوؤں کے درمیان کئی گھنٹوں تک فائرنگ کا تبادلہ جاری رہا، فوٹو : فائل

افغان فوجی اہلکاروں اور طالبان جنگجوؤں کے درمیان کئی گھنٹوں تک فائرنگ کا تبادلہ جاری رہا، فوٹو : فائل

کابل: طالبان جنگجوؤں نے صوبے قندوز میں فوجی چیک پوسٹ پر حملہ کردیا جس کے نتیجے میں 14 افغان اہلکار ہلاک اور 2 زخمی ہوگئے۔

افغان میڈیا کے مطابق صوبے قندوز میں فوجی چیک پوسٹ پر طالبان جنگجوؤں نے دھاوا بول دیا، حملہ آوروں اور اہلکاروں کے درمیان کئی گھنٹوں تک فائرنگ کا تبادلہ جاری رہا جس کے دوران 14 فوجی اہلکار ہلاک اور دو زخمی ہوگئے۔

یہ خبر پڑھیں : مشترکہ آپریشن کے دوران افغان اہلکار کی ساتھیوں پر ہی فائرنگ، 2 امریکی فوجی ہلاک

مقامی طالبان کمانڈرز نے حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے بتایا کہ افغان فوجیوں کا بڑے پیمانے پر جانی نقصان ہوا ہے جب کہ جنگجوؤں نے بھاری مقدار میں اسلحہ اور جنگی ساز و سامان  بھی قبضے میں لے لیا اور ایک چوکی پر قبضہ کرلیا ہے۔

یہ خبر پڑھیں : افغانستان میں امریکی فضائیہ کا طیارہ گر کر تباہ ہوگیا

دوسری جانب افغان وزارت دفاع کی جانب سے جاری بیان میں طالبان حملے میں صرف 5 فوجی اہلکاروں کی ہلاکت کی تصدیق کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ جوابی فائرنگ سے کئی جنگجو مارے گئے اور بچ جانے والے بھاگنے پر مجبور ہوئے تاہم ہلاکتوں کی تعداد اور دیگر تفصیلات فرام نہیں کی گئیں۔

یہ خبر بھی پڑھیں : افغانستان میں فوجی اڈے پر طالبان جنگجوؤں کا حملہ، 15 اہلکار ہلاک

واضح رہے کہ امریکا اور طالبان کے درمیان ایک ہفتے کے لیے ایک دوسرے پر پُرتشدد کارروائیوں اور حملوں کو روکنے پر اتفاق کرلیا گیا ہے جس کے بعد طالبان کی جانب سے افغان فوج اور پولیس پر حملوں میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔