عوام کی مشکلات پر خاموش تماشائی نہیں بن سکتے، وزیراعظم

ویب ڈیسک  منگل 18 فروری 2020
عوام کو ریلیف فراہم کرنے کی ہر آپشن پر غور کیا جائے گا، عمران خان۔ فوٹو:فائل

عوام کو ریلیف فراہم کرنے کی ہر آپشن پر غور کیا جائے گا، عمران خان۔ فوٹو:فائل

 اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ احساس ہے کہ کم آمدنی والا اور تنخواہ دار طبقہ مشکلات کا شکار ہے، تمام عوامل کے باوجود حکومت عوام کی مشکلات پر خاموش تماشائی بن کر نہیں رہ سکتی۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق وزیرِاعظم عمران خان کی زیر صدارت پٹرول اور گیس کی قیمتوں میں ممکنہ کمی لانے کے حوالے سے اعلیٰ سطحی اجلاس ہوا جس میں وزیرِ توانائی عمر ایوب،  اسد عمر، فردوس عاشق، مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد، معاون خصوصی بیٹرولیم ندیم بابر، سیکرٹری پٹرولیم، قائم مقام چیئرمین ایف بی آر اور سینئر افسران شریک ہوئے۔

معاون خصوصی برائے پٹرولیم ندیم بابر نے ملک میں پیٹرول، ڈیزل اور گیس کی قیمتوں  کے تعین کے طریقہ کار اور  بین الاقوامی عوامل ،  گیس کے شعبے میں  ماضی کے حکمرانوں کی جانب سے کیے جانے والے معاہدوں اور قیمتوں میں استحکام اورممکنہ حد تک کمی لانے  کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ اور تجاویز پیش کیں

اس موقع پر وزیرِ اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ہمارا بنیادی مقصد عوام کو اور خصوصاً کم آمدنی والے افراد کو ممکنہ حد تک ریلیف فراہم کرنا ہے، حکومت کو احساس ہے کہ کم آمدنی والا اور تنخواہ دار طبقہ مشکلات کا شکار ہے اور حکومت کی ہر ممکنہ کوشش ہے کہ بجلی اور گیس کی قیمتوں کے ضمن میں جہاں تک ممکن ہو سکے ان طبقات کو ریلیف فراہم کیا جائے۔

ماضی میں طویل المدت معاہدوں اور ان کے نتیجے میں عوام پر پڑنے والے بوجھ کا ذکر کرتے ہوئے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ان تمام عوامل کے باوجود حکومت عوام کی مشکلات پر خاموش تماشائی نہیں بن سکتی، عوام کو ریلیف فراہم کرنے کی ہر آپشن پر غور کیا جائے گا۔

وزیرِ اعظم نے معاون خصوصی برائے پٹرولیم کو ہدایت کی کہ پٹرول ، ڈیزل اور گیس میں ممکنہ حد تک کمی لانے کی غرض سے جامع روڈمیپ جلد از جلد مرتب  کیا جائے اور اس ضمن میں سفارشات پیش کی جائیں تاکہ قابل عمل سفارشات پر عمل درآمد کیا جا سکے۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔