گلوکارہ صنم ماروی کو خلع کی ڈگری جاری

ویب ڈیسک  جمعرات 20 فروری 2020
صنم ماروی کے شوہر کے پیش نہ ہونے پر یکطرفہ ڈگری جاری کی جاتی ہے، عدالت فوٹوفائل

صنم ماروی کے شوہر کے پیش نہ ہونے پر یکطرفہ ڈگری جاری کی جاتی ہے، عدالت فوٹوفائل

لاہور: مقامی عدالت نے گلوکارہ صنم ماروی کے خلع کے دعوی پر ڈگری جاری کردی۔

لاہور کی مقامی عدالت میں گلوکارہ صنم ماروی کے خلع کے دعوی پر سماعت ہوئی، فیملی جج ثنا افضل نے سماعت کی۔ دوران سماعت گلوکارہ کی وکیل ایڈوکیٹ نور العین نے عدالت سے استدعا کرتے ہوئے کہا کہ صنم ماروی کا شوہر انہیں مارتا پیٹتا ہے اور خرچہ بھی نہیں دیتا لہذا صنم ماروی کو خلع کی ڈگری جاری کی جائے۔

عدالت نے خلع کے دعوی پر سماعت کرتے ہوئے کہا صنم ماروی کے شوہر کو بیان ریکارڈ کروانے کے متعدد مواقع دیے گئے۔ صنم ماروی کے شوہر کے پیش نہ ہونے پر یکطرفہ ڈگری جاری کی جاتی ہے۔ فیملی جج ثنا افضل نے صنم ماروی کے دعوی پر ڈگری جاری کی۔

اپنی درخواست میں صنم ماروی نے کہا تھا کہ شادی کے بعد ان کے شوہر کا طرز عمل بدل گیا ہے اور وہ زبانی اور جسمانی طور پر بھی ان کے ساتھ بدسلوکی کرتے ہیں۔ گزشتہ سماعت پر صنم ماروی نے اپنا بیان ریکارڈ کرواتے ہوئے کہا تھا کہ گیارہ سال سے شوہر کے ظلم وستم سہہ رہی ہوں۔ اپنے بچوں کی خاطر گزارا کر رہی تھی لیکن اب شوہر حامد کے ساتھ تعلقات برقرار رکھنا ناممکن ہے۔

واضح رہے کہ صنم ماروی نے 2009 میں حامد علی نامی شخص سے شادی کی تھی، جس سے ان کے تین بچے ہیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔