عالمی کراچی کتب میلے کاا فتتاح، طلبہ اور طالبات کا رش رہا

اسٹاف رپورٹر  جمعـء 6 دسمبر 2013
صوبائی وزیرتعلیم نثارکھوڑو کتب میلے میں اسٹالز کا دورہ کررہے ہیں،شہلا رضا ،عزیز خالد بھی موجود ہیں ۔ فوٹو : ایکسریس

صوبائی وزیرتعلیم نثارکھوڑو کتب میلے میں اسٹالز کا دورہ کررہے ہیں،شہلا رضا ،عزیز خالد بھی موجود ہیں ۔ فوٹو : ایکسریس

کراچی: پاکستان پبلشرز اینڈ بک سیلرز ایسوسی ایشن کے تحت نویں ’’عالمی کراچی کتب میلے‘‘کا آغاز ہوگیا ۔

بین الاقوامی کراچی کتب میلہ ایکسپو سینٹرمیں سجایاگیا ہے جس کی افتتاحی تقریب گزشتہ روز منعقدہوئی، کتب میلے کوعوام کے لیے کھول دیاگیا ، طلبہ اور طالبات کا رش رہا، 5 روزتک جاری رہنے والے کتب میلے میں ایکسپو سینٹر کے ہال نمبر 1،2اور 3 میں 315 اسٹالز لگائے گئے ہیں جس میں 250 کے لگ بھگ پبلشرز شریک ہیں،کتب میلے میں ادب، ثقافت ، شاعری، تاریخ ،تاریخ برصغیر، تاریخ اسلام ، فلسفہ، طب، سائنس، ریاضی، انگریزی ادب،نفسیات، دینی علوم ودیگر موضوعات پرکتب رکھی گئی ہیں ، انگریزی اوراردولغت،قرآن شریف اورتفاسیرکی کتابیں بھی موجود ہیں ،کئی پبلشرزکی جانب سے بچوں کے ادب، نصابی کتب ،نظموں اورکہانیوں کی کتابیں بھی اسٹالز پر سجائیں گئی ہیں ۔

بچوں کی کہانیوں اورانگریزی واردو نظموں کی سی ڈیز بھی دستیاب ہیں، کتب میلے میں ویلکم بک پورٹ ، گابا بک، لبرٹی بک، آکسفورڈ یونیورسٹی پریس، خانہ فرہنگ اسلامی ایران، نیشنل بک فاؤنڈیشن ، اردو اکیڈمی، نگارشات اردولاہور ، پاکستان لا ہاؤس، انجمن ترقی اردو، اردوسائنس بورڈ،سندھ ٹیکسٹ بک بورڈ،شاہ لطیف چیئرجامعہ کراچی، شعبہ تصنیف وتالیف اردویونیورسٹی، مکتبہ المدینہ کے علاوہ دیگر پبلشرزکے اسٹالز موجود ہیں۔

کتب میلے کی افتتاحی تقریب سے صوبائی وزیرتعلیم نثار احمد کھوڑو ، ڈپٹی اسپیکر سندھ اسمبلی شہلا رضا، پاکستان پبلشرز اینڈ بک سیلرز ایسوسی ایشن کے صدر عزیز خالد اور کتب میلے کے کنوینر اویس مرزا جمیل نے خطاب کیا ، اس موقع پراصغر زیدی،اقبال صالح محمد اورپبلشرز ایسوسی ایشن کے دیگر اراکین بھی موجود تھے ، وزیر تعلیم نثار کھوڑو نے اپنے خطاب میں کہا کہ ادیب ہی معاشرے میں صحت مندانہ سرگرمیوں کے فروغ میں کردار ادا کرسکتے ہیں، عوام حکمرانوں کو بھول جاتے ہیں مگرقلم کاروںکو یاد رکھتے ہیں، وزیر تعلیم نثار کھوڑو اور ڈپٹی اسپیکر سندھ اسمبلی شہلا رضا نے کتب میلے کے اسٹالز کا دورہ کیا۔

کتب میلے میں غیرملکی پبلشرزشریک نہیںصرف ان کی کتابیں رکھی گئی ہیں
پاکستان پبلشرزاینڈ بک سیلرزایسوسی ایشن کی جانب سے ایکسپوسینٹرکراچی میں لگائے گئے ’’بین الاقوامی کراچی کتب میلے‘‘میں کوئی بھی غیرملکی پبلشرزشریک نہیں ہے تاہم بعض غیرملکی پبلشرزکی کتابوں کے اسٹالز لگائے گئے ہیں کتب میلے ’’رینڈم پبلشرزنئی دہلی،ویشووویجے پبلشرزنئی دہلی، سنگاپورایشیا پبلشراورخانہ فرہنگ ایران‘‘کے اسٹال لگائے ہیں، خانہ فرہنگ کادفترپہلے ہی کراچی میں قائم ہے۔

جبکہ رینڈم پبلشرزنئی دہلی،ویشووویجے پبلشرزنئی دہلی اور سنگاپورایشیا پبلشرکے اسٹال کادورہ کرنے سے معلوم ہوا ہے کہ یہ پبلشرزپاکستان نہیں پہنچے ہیں صرف کتابیں ڈسٹری بیوٹرزکوفروخت کے لیے فراہم کی گئی ہیں، واضح رہے کہ گزشتہ برس کم از کم دو بھارتی پبلشرز کتب میلے میں شریک ہوئے تھے جبکہ ماضی میں سعودی عرب، سنگاپور،بھارت اورجرمنی سمیت کئی غیرملکی پبلشرزاس کتب میلے میں شریک ہوتے رہے ہیں ۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔