شیخوپورہ میں ٹرین اور مسافر کوسٹر میں تصادم سے سکھ خاندان کے 19 افراد ہلاک

ویب ڈیسک  جمعـء 3 جولائ 2020
حادثےمیں زخمی ہونے والوں کو اسپتال منتقل کردیا گیا فوٹو: ٹویٹر

حادثےمیں زخمی ہونے والوں کو اسپتال منتقل کردیا گیا فوٹو: ٹویٹر

فاروق آباد کے قریب ریلوے پھاٹک پر مسافر کوسٹر ٹرین کی زد میں آنے سے سکھ برادری سے تعلق رکھنے والے ایک ہی خاندان کے 19 افراد ہلاک جب کہ 8 زخمی ہوگئے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق شیخورہ کے علاقے فاروق آباد میں جاتری روڑ پر واقع ریلوے پھاٹک پر مسافر کوسٹرکراچی سے لاہور جانے والی شاہ حسین ایکسپریس سے ٹکرا گئی، جس کے نتیجے میں کوسٹر میں سوار سکھ برادری کے 19 افراد ہلاک اور 8 زخمی ہوگئے۔ ہلاک اور زخمی ہونے والوں کو ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر اسپتال منتقل کردیا گیا۔

ریسکیو حکام کا کہنا ہے کہ کوسٹر میں سکھ خاندان سوار تھا جس کا تعلق پشاور سے تھا، خاندان کے تمام افراد قریبی عزیز کی فوتگی پر ننکانہ صاحب آئے تھے، ننکانہ صاحب سے واپس پشاور جاتے ہوئے سچا سودا گردوارہ کے پاس کوسٹر بس ڈرائیور نے پھاٹک سے پیچھے کچے راستے سے بس گزارنے کی کوشش کی، اسی دوران کوسٹر کراچی سے لاہور جانے والی شاہ حسین ایکسپریس سے ٹکرا گئی۔

ترجمان محکمہ ریلوے کا کہنا ہے کہ وزیر ریلوے شیخ رشید  نے واقعے کے ذمہ داروں کے خلاف فوری کارروائی کا حکم دیا ہے، ڈی ای این کو فوری طور پر معطل کردیا گیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے شیخوپورہ ٹرین حادثے میں ہلاکتوں پراظہار افسوس کرتے ہوئے زخمیوں کو فوری طبی امداد دینے کی ہدایت کی ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔