اسد عمر کا کراچی میں اتوار سے غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کےخاتمے کا اعلان

ویب ڈیسک  ہفتہ 11 جولائ 2020
بجلی بحران میں غلطی کس کی تھی اورغیراعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا ذمہ دار کون ہے فیصلہ نیپرا کرے گا، وفاقی وزیر۔ فوٹو:فائل

بجلی بحران میں غلطی کس کی تھی اورغیراعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا ذمہ دار کون ہے فیصلہ نیپرا کرے گا، وفاقی وزیر۔ فوٹو:فائل

کراچی: وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے کراچی میں اتوار سے غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کےخاتمے کا اعلان کردیا۔

گورنر ہاؤس عمران اسماعیل کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر اسد عمر کا کہنا تھا کہ کےالیکٹرک کیلئے فرنس آئل اور گیس کی سپلائی بڑھا دی ہے، کے ای کو 290 ملین مکعب فٹ گیس دی جائے گی،  بن قاسم پاور پلانٹ کے تمام یونٹس کو چلایا جائے گا، کراچی میں کل سے غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ نہیں ہوگی اور شہر کے تین چوتھائی حصے کو مسلسل بجلی فراہم کی جائے گی۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ کے الیکٹرک نجی ادارے کے پاس ہے، کراچی کے نہیں، بجلی بحران میں غلطی کس کی تھی اورغیراعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا ذمہ دار کون ہے فیصلہ نیپرا کرے گا، اگر کے ای کا رویہ درست نہیں ہوا تو وفاق کے ای کو اپنی تحویل میں لے سکتا ہے۔

اسدعمر کا کہنا تھا کہ کراچی کی پیک ڈیمانڈ 3500  سے 3600 میگا واٹ ہے، کراچی میں آئندہ سال 18 فیصد بجلی کا اضافہ کیا جائے گا، 2 سال کے دوران بجلی کی فراہمی میں 1300 میگاواٹ بجلی کا اضافہ کیاجائےگا، کے الیکٹرک 3 سال میں 2100 میگا واٹ بجلی سسٹم میں ڈالنے کے منصوبہ پر کام کرے۔

گورنر سندھ عمران اسماعیل کا کہنا تھا کہ کراچی کے مسائل کو حل کریں گے،  کراچی میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ کے معاملے کو حل کرنے کے لیے کوشاں ہیں،  آج بجلی کی لوڈ شیڈنگ سےمتعلق اجلاس بلایا گیاتھا،  اتوار سے کراچی میں غیر اعلانیہ بجلی کی لوڈشیڈنگ کا سلسلہ ختم ہوجائے گا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔