کرکٹ میں بدستورنسلی تعصب موجود ہے، سیاہ فام پروٹیزکرکٹرز

اسپورٹس ڈیسک  بدھ 15 جولائ 2020
البتہ کاگیسو ربادا اور لونگی نگیڈی جیسے موجودہ سیاہ فام پلیئرزاس میں شامل نہیں ہیں: فوٹو : فائل

البتہ کاگیسو ربادا اور لونگی نگیڈی جیسے موجودہ سیاہ فام پلیئرزاس میں شامل نہیں ہیں: فوٹو : فائل

جوہانسبرگ:  جنوبی افریقی کرکٹ میں نسلی تفریق ایک بار پھر کھل کرسامنے آگئی۔

30 سابق سیاہ فام پروٹیز کرکٹرز نے اپنے مشترکہ اعلامیہ میں الزام عائد کیا کہ کھیل مں بدستور نسلی تعصب موجود ہے، ان پلیئرز میں مکھایا این تینی، ورنون فلینڈر، ہرشل گبز، ایشول پرنس، پال ایڈمز اور پال ڈومنی بھی شامل ہیں،5 کوچز نے بھی اس اعلامیے کی تائید کردی۔

البتہ کاگیسو ربادا اور لونگی نگیڈی جیسے موجودہ سیاہ فام پلیئرزاس میں شامل نہیں ہیں، اعلامیے میں کہا گیا کہ بورڈ موجودہ موقع سے فائدہ اٹھا کر کھیل سے رنگت کی بنیاد پر تفریق ختم کرے، ہم اپنے سفید فام ساتھی کرکٹرزسے بھی کہتے ہیں کہ وہ بھی اس مہم کو سپورٹ کریں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔