احساس کیش پروگرام کو 144 سے بڑھا کر 203 ارب روپے کرنے کا اعلان

ویب ڈیسک  جمعرات 16 جولائ 2020
ایک کروڑ 69 لاکھ خاندان مستفید ہونگے، معاون خصوصی

ایک کروڑ 69 لاکھ خاندان مستفید ہونگے، معاون خصوصی

 اسلام آباد: وفاقی حکومت نے احساس ایمرجنسی کیش پروگرام کا بجٹ 144 سے بڑھا کر 203 ارب روپے کرنے کا اعلان کردیا۔

وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے غربت مٹاؤ پروگرام ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ احساس ایمرجنسی کیش پروگرام کا بجٹ 144 ارب روپے سے بڑھا کر 203 ارب روپے کر دیا گیا جس سے ایک کروڑ 69 لاکھ خاندان مستفید ہونگے۔

ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کہا کہ اس پروگرام نے کوویڈ19کے باعث لاک ڈاؤن کے معاشی اثرات کو کم کرنے میں نمایاں کردار ادا کیا، ابتدائی طور پر پروگرام کا آغاز کیا گیا تھا تو 12ملین مستحقین کیلئے اس کا بجٹ 144ارب روپے تھا۔

معاون خصوصی نے بتایا کہ احساس پروگرام مکمل طور پر ایک شفاف، قواعد وضوابط پر مبنی غیرسیاسی پروگرام ہے جس میں صوبہ سندھ کا حصہ سب سے زیادہ ہے جو اس پروگرام کے غیر سیاسی ہونے کا مظہر ہے۔

ثانیہ نشتر کا کہنا تھا کہ بائیومیٹرک کی تصدیق کے مسائل اور وفات پانے والے مستحقین کے لواحقین کے اہل خانہ کو ادائیگیوں کرنا بڑا چیلنج تھا، بائیومیٹرک مشکلات کے باعث مستحق افراد میں ادائیگیوں کو یقینی بنانے کیلئے متبادل طریقہ کار کا حل پیش کیا۔

معاون خصوصی نے مزید کہا کہ 8جولائی 2020کو احساس ایمرجنسی کیش پورٹل کا اجراء کیا گیا، اب تک پورے ملک میں 1 کروڑ 28 لاکھ 63 ہزار سے زائد محنت کش افراد میں 155 ارب 64 کروڑ روپے سے زائد کی امدادی رقم تقسیم کی جا چکی ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔