37 لاکھ نامناسب پاکستانی وڈیوزنشرہونے سے روکیں، ٹک ٹاک

بزنس رپورٹر  جمعرات 30 جولائ 2020
98.2 فیصد ناموزوں وڈیوز کوشکایت موصول ہونے سے پہلے ہٹا دیا جاتا ہے، ترجمان ۔  فوٹو : فائل

98.2 فیصد ناموزوں وڈیوز کوشکایت موصول ہونے سے پہلے ہٹا دیا جاتا ہے، ترجمان ۔ فوٹو : فائل

کراچی:  ٹک ٹاک کے سماجی اثرات پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے ٹک ٹاک کے ترجمان نے کہا ہے کہ ٹک ٹاک کی اوّلین ترجیح قانون کی پاسداری کے ذریعے ایپلی کیشن کے اندرونی ماحول کو محفوظ اور مثبت رکھنا ہے۔

2019 کے اعداد و شمار کے مطابق 37  لاکھ سے زائد  غیر مناسب پاکستانی وڈیوز کو نشر ہونے سے روکا جا چکا ہے۔ کسی بھی غیر مناسب مواد (Content) کی بروقت شناخت اور نظرثانی کیلیے متعدد ٹیکنالوجیز اور جدید حکمت عملی کا  نفاذ کیا جاتا ہے۔ ترجمان نے مزید کہا کہ تمام معاشرتی اقدارکی خلاف ورزی کرنے والے اکاؤنٹس پر پابندی لگادی جاتی ہے۔

اس مقصد کے لیے صارفین کومتعدد کنٹرولز، تجزیاتی سہولیات اوررازداری کے اختیارات فراہم کیے جاتے ہیں۔ 98.2 فیصد ناموزوں ویڈیوز کو بروقت شناخت کرکے شکایت موصول ہونے سے پہلے ہٹا دیا جاتا ہے۔ متعلقہ حکّام کے ساتھ عملی مذاکرات کو بھی فروغ دیا جا رہا ہے تاکہ پالیسیوں سے آگاہ کیا جا سکے۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔