اسلام آباد میں نیوی کلب کی تعمیرغیر قانونی قرار، سیل کرنے کا حکم

ویب ڈیسک  جمعرات 23 جولائ 2020
 کیوں نا سی ڈی اے چئیرمین اور بورڈ ممبران کے خلاف کاروائی کی جائے، عدالت۔ فوٹو:فائل

کیوں نا سی ڈی اے چئیرمین اور بورڈ ممبران کے خلاف کاروائی کی جائے، عدالت۔ فوٹو:فائل

 اسلام آباد: ہائی کورٹ نے راول جھیل کنارے کلب سیل کرنے کا تحریری حکمنامہ جاری جاری کردیا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ نے وفاقی دارالحکومت میں راول جھیل کنارے نیوی کلب کی تعمیر کو بادی النظر میں غیر قانونی قرار دے دیا اور اس حوالے سے تحریری حکمنامہ بھی جاری کیا ہے۔

حکمنامے میں عدالت نے استفسار کرتے ہوئے کہا کہ کیا سی ڈی اے قوانین کا اطلاق صرف عام آدمی کے لیے ہے، طاقتور اور کمزور کے لیے الگ رویہ ناقابل برداشت ہے، قوانین پر عملداری نہ کرنے کے ذمہ دار سی ڈی اے چئیرمین اور بورڈ ممبران ہیں، کیوں نا سی ڈی اے چئیرمین اور بورڈ ممبران کے خلاف کاروائی کی جائے۔

حکمنامے میں کہا گیا ہے کہ سی ڈی اے کے مطابق راول جھیل کنارے کلب کی الاٹمنٹ ہوئی نہ ہی  تعمیر کی اجازت دی گئی، بادی النظر میں راول جھیل کنارے کلب کی تعمیر غیر قانونی ہے،  وفاقی حکومت اور سی ڈی اے فوری طور پر کلب کو سیل کریں، اور سیکرٹری کابینہ نیوی کلب کا  معاملہ آئندہ اجلاس میں کابینہ کے سامنے رکھیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔