مودی کے ہاتھوں 5 اگست کو بابری مسجد کی جگہ مندر کا سنگ بنیاد رکھا جائے گا

ویب ڈیسک  پير 27 جولائ 2020
گزشتہ برس 5 اگست کو ہی مودی سرکار نے آئین میں ترمیم کرکے کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کی تھی۔ فوٹو : فائل

گزشتہ برس 5 اگست کو ہی مودی سرکار نے آئین میں ترمیم کرکے کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کی تھی۔ فوٹو : فائل

نئی دہلی: بھارتی وزیراعظم نریندر مودی 5 اگست کو بابری مسجد کی مندر کی تعمیر کا سنگ بنیاد رکھیں گے۔ 

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق ایودھیا میں بابری مسجد کی متنازع زمین کی جگہ پر 161 فٹ بلند مندر کی تعمیر کا سنگ بنیاد وزیراعظم مودی رکھیں گے جس کے لیے 5 اگست کی تاریخ رکھی گئی ہے، اسی تاریخ کو گزشتہ برس مودی سرکار نے آرٹیکل 370 کو منسوخ کرکے کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کردی تھی اور وادی کو دو یونین ٹریٹری میں تبدیل کردیا تھا۔

یہ خبر پڑھیں: بھارتی سپریم کورٹ نے بابری مسجد کی جگہ مندر تعمیر کرنے کا حکم دے دیا

شدت پسند ہندو قوم پرست جماعت وشوا ہندو پریشد یا ورلڈ ہندو آرگنائزیشن کے مطابق 5 اگست کی تاریخ علم نجوم کے مطابق ہندوؤں کے لیے نیک شگون ہے اس لیے اسی دن مندر کا سنگ بنیاد رکھا جائے گا تاہم کورونا وائرس کی وجہ سے عوامی اجتماع کے بجائے رسومات کو براہِ راست نشر کیا جائے گی اور صرف مخصوص لوگ تقریب میں شریک کریں گے۔

یہ خبر بھی پڑھیں: مسلمانوں کو 5 ایکڑ زمین کی بھیک نہیں بابری مسجد چاہیئے، اسد اویسی

واضح  رہے کہ بھارتی سپریم کورٹ نے گزشتہ برس 9 نومبر کو 2019 کو بابری مسجد کی متنازع زمین پر رام مندر تعمیر کرنے اور مسلمانوں کو مسجد کی تعمیر کے لیے متبادل جگہ فراہم کرنے کا حکم دیا تھا جس پر مسلم رہنما اسد اویسی نے کہا تھا کہ مسلمانوں کو مسجد کے لیے 5 ایکڑ زمین کی بھیک نہیں چاہیئے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔