ہنگامہ آرائی،پولیس پر حملہ،عذیر بلوچ اور امین بلیدی پر فرد جرم عائد

کورٹ رپورٹر  منگل 28 جولائ 2020
گینگ وار کے ٹارگٹ کلرز نوید اور امام بخش کا 5 اگست تک جسمانی ریمانڈ
فوٹو : فائل

گینگ وار کے ٹارگٹ کلرز نوید اور امام بخش کا 5 اگست تک جسمانی ریمانڈ فوٹو : فائل

کراچی:  گینگ وار سرغنہ کے بغدادی تھانے کے ایک مقدمہ میں اہم پیش رفت، انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت نے لیاری آپریشن کے دوران ہنگامہ آرائی، جلاؤ گھیراؤ اور پولیس پر حملہ کے مقدمہ میں گینگ وار کے سرغنہ عزیر بلوچ اور امین بلیدی پر فرد جرم عائد کردی، ملزمان کے صحت جرم سے انکار پر تفتیشی افسر اور گواہوں کو نوٹس جاری کردیے گئے۔

کراچی سینٹرل جیل میں انسداد دہشتگردی کمپلیکس میں خصوصی عدالت کے روبرو لیاری آپریشن کے دوران پولیس پر حملے سمیت 14 مقدمات کی سماعت ہوئی۔ عدالت نے بغدادی تھانے کے ایک مقدمے میں گینگ وار کے سرغنہ عذیر بلوچ اور امین بلیدی پر فرد جرم عائد کردی۔

آئندہ سماعت پر عدالت نے گواہوں اور تفتیشی افسر کو پیش ہونے کا حکم دیدیا۔دریں اثنا انسداد دہشت گردی کی منتظم عدالت نے گرفتار گینگ وار کے انتہائی مطلوب ٹارگٹ کلرز نوید عرف کپی اور امام بخش عرف واجہ کو 5 اگست تک جسمانی ریمانڈ پر سی ٹی ڈی پولیس کے حوالے کردیا۔ کراچی میں انسداد دہشت گردی کی منتظم عدالت کے روبرو سی ٹی ڈی نے گینگ وار کے نوید عرف کپی اور امام بخش عرف واجہ کو پیش کیا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔