بچوں کی خودکشی کی تحقیقات تک پب جی پر پابندی برقرار

ارشاد انصاری  منگل 28 جولائ 2020
رجسٹریشن کیلیے بات چیت چل رہی ہے،14ہزار پراکسیز بند کی ہیں، پی ٹی اے
(فوٹو: فائل)

رجسٹریشن کیلیے بات چیت چل رہی ہے،14ہزار پراکسیز بند کی ہیں، پی ٹی اے (فوٹو: فائل)

 اسلام آباد: پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی نے بچوں کی خودکشی کی تحقیقات تک پب جی پر پابندی برقرار رکھنے کا اعلان کیا ہے۔

علی خان جدون کی زیر صدارت قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی کے اجلاس میںارکان نے بدنام زمانہ آن لائن گیم کا معاملہ اٹھاتے ہوئے کہا کہ عدالت نے پابندی اٹھانے کا فیصلہ دیا لیکن پی ٹی اے نے برقرار رکھی ہے۔ حکام نے بتایا ہائیکورٹ میں پب جی کے نمائندے نے پریس ریلیز کے ذریعے پابندی کا معاملہ اٹھایا،جس پرعدالت نے فریقین کو سن کر دوبارہ فیصلہ جاری کرنے کا حکم دیا۔

پی ٹی اے نے تفصیلی فیصلہ جاری کردیا ہے۔ گیم کے متعلق متعدد شکایات ملیں، بچوں کی خود کشیوں کے بعد اس پر عارضی پابندی کا فیصلہ کیا۔کنول شوزب نے کہا قانونی طریقے سے گیم کھیلنے اور ریونیو حاصل کرنے پر پابندی ہے جبکہ پراکسیز کے ذریعے نوجوان آج بھی یہ گیم کھیل رہے ہیں۔ پی ٹی اے حکام نے بتایا پب جی سے معلومات مانگی ہیں،رجسٹریشن کیلئے بات چیت چل رہی ہے، 14 ہزار سے زائد پراکسیز بند کی ہیں،حتمی حکم تمام پہلو سامنے رکھ کر جاری کیا جائے گا۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔