مضاربہ اسکینڈل کیس، مرکزی ملزم مطیع الرحمن کو12 سال قید

نمائندہ ایکسپریس  بدھ 29 جولائ 2020
اکاؤنٹس کیس میں سابق صدر سندھ بینک بلال شیخ کی درخواست بریت پر فیصلہ موخر
۔  فوٹو: فائل

اکاؤنٹس کیس میں سابق صدر سندھ بینک بلال شیخ کی درخواست بریت پر فیصلہ موخر ۔ فوٹو: فائل

 اسلام آباد:  احتساب عدالت نے مضاربہ سکینڈل میں جرم ثابت ہونے پر مرکزی ملزم مطیع الرحمن کو12 سال قید اور 17کروڑ روپے جرمانہ کی سزا جبکہ جرم ثابت نہ ہونے پر شریک ملزم ثاقب کو بری اور اشتہاری ملزم عتیق الرحمن کے دائمی وارنٹ گرفتاری جاری کردیے۔

جج محمد بشیر نے فیصلہ سنایا، دوران سماعت مرکزی ملزم گلوبل کنسرن نامی کمپنی کے مطیع الرحمن کو اڈیالہ جیل سے ویڈیولنک پر عدالت حاضر کیاگیا جبکہ ملزم ثاقب عدالت پیش ہوا، دوسری جانب احتساب عدالت نمبر 2 میں زیر سماعت جعلی اکاؤنٹس کیس میں ملزم سابق صدر سندھ بنک بلال شیخ کی بریت کیلئے دائر درخواست پر فیصلہ 4 اگست تک موخر کردیاگیا۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔