شوگر ملوں پر کسانوں کے کروڑوں روپے واجب الادا، شریف خاندان سب سے بڑا نادہندہ

طالب فریدی  منگل 28 جولائ 2020
پنجاب کی بیشتر بڑی شوگر ملز مالکان نے گنے کی مد میں ایک ارب 36 کروڑ 12 لاکھ روپے کی رقم ادا نہیں کی.ذرائع۔ فوتو، فائل

پنجاب کی بیشتر بڑی شوگر ملز مالکان نے گنے کی مد میں ایک ارب 36 کروڑ 12 لاکھ روپے کی رقم ادا نہیں کی.ذرائع۔ فوتو، فائل

لاہور: اربوں روپے سبسڈی لینے کے باوجود عوام کو مہنگی چینی فروخت کرنے والی شوگر ملوں نے غریب کسانوں کی ایک ارب روپے سے زائد  گنے کی واجب الادا  ہیں اور رقم تا حال ادا نہ ہونے کی وجہ سے غریب کسان مزید مالی مشکلات کا شکار ہو گئے ہیں۔

پنجاب کی بیشتر بڑی شوگر ملز مالکان نے گنے کی مد میں ایک ارب 36 کروڑ 12 لاکھ روپے کی رقم ادا نہیں کی۔ شریف خاندان کی دو شوگر ملوں سمیت ہارون اختر خان کی شوگر ملوں نے بھی رواں سال خریدے گئے گنے کے کروڑوں روپے دبا لئے.

ذرائع کین کمیشن کے مطابق شریف فیملی و سلمان شہباز کی ملکیت رمضان شوگر ملز اور العربیہ ملز سب سے بڑی نادہندہ نکلیں۔  رمضان شوگر ملز کے ذمہ 46 کروڑ 34 لاکھ واجب الادا ہیں، ہارون اختر خان کی ملکیتی 2 ملز تاندلیانوالہ ون اور ٹو کے ذمہ 26 کروڑ روپے کے بقایا جات ہیں ۔

یہ بھی پڑھیے: وزیراعظم کا شوگر مافیا کیخلاف کریک ڈاؤن کا فیصلہ، مراسلہ جاری

اسی طرح  العربیہ نے 9 کروڑ 83 لاکھ، چنار شوگر ملز 8 کروڑ 74 لاکھ، حسین شوگر ملز نے 6 کروڑ 60 لاکھ ادا نہیں کیے۔ حق باہو شوگر ملز کے ذمہ چار کروڑ 90 لاکھ، شکر گنج ون اور ٹو کے ذمہ 19 کروڑ روپے واجب الادا ہیں۔شاہ تاج شوگر ملز نے 5 کروڑ، عبداللہ ون نے 8 کروڑ 80 لاکھ روپے کسانوں کو ادا نہیں کیے۔

رواں برس پنجاب کی 41 شوگر ملز نے ایک کھرب 75 ارب 44 کروڑ کا گنا خریدا. شوگر ملز کی طرف سے کسانوں کو ایک کھرب 74 ارب 8 کروڑ روپے کی ادائیگیاں کی گئی ہیں.

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔