مشکوک لائسنس کے بعد نئی مشکل؛ پی آئی اے ملازمین 2 ماہ سے تنخواہ سے محروم

ویب ڈیسک / طالب فریدی  بدھ 29 جولائ 2020
پی آئی اے کے ملک بھر میں 14 ہزار ملازمین ہیں فوٹو: فائل

پی آئی اے کے ملک بھر میں 14 ہزار ملازمین ہیں فوٹو: فائل

 لاہور: پائلٹس کے مشکوک لائسنس کے بعد اب پی آئی اے کے ملازمین 2 ماہ سے اپنی تنخواہوں سے بھی محروم ہوگئے ہیں۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق قومی ایئرلائن کورونا لاک ڈاؤن کے باعث فضائی آپریشن بند ہونے پر بھی ریونیو کی کمی کا شکار ہوگئی ہے۔ قومی ایئرلائن کے ملازمین 2 ماہ سے تنخواہ سے محروم ہیں اور انہیں مئی کے بعد تنخواہیں ہی ادا نہیں کی گئی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پی آئی اے ملازمین عید الاضحی بھی تنخواہ کے بغیر گزاریں گے کیونکہ انتظامیہ نے ملازمین کو تنخواہوں کی ادائیگی اگست میں کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔

واضح رہے کہ پی آئی اے ملک کی سب سے بڑی ہوائی کمپنی ہے جس کے ملک بھر میں 14 ہزار ملازمین ہیں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔