ملک میں کورونا وبا کے مزید 782 نئے کیسزاور17 اموات رپورٹ

ویب ڈیسک  جمعـء 7 اگست 2020
ملک بھر میں 735 اسپتالوں میں کورونا مریضوں کے لیے سہولیات ہیں، این سی او سی: فوٹو: فائل

ملک بھر میں 735 اسپتالوں میں کورونا مریضوں کے لیے سہولیات ہیں، این سی او سی: فوٹو: فائل

 اسلام آباد: ملک میں 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وبا کے مزید 782 نئے کیسزراور17 اموات رپورٹ ہوئیں۔

این سی اوسی کی جانب سے جاری بیان کے مطابق 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں 782 نئے کیسزرپورٹ ہوئے جب کہ 17 متاثرین انتقال کرگئے جس کے بعد ملک میں ایکٹیوکیسزکی تعداد 18 ہزار494 ہوگئی ہے جب کہ ملک بھرمیں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد 2 لاکھ 82 ہزار 645 تک جا پہنچی ہے اورصحتیاب ہونے والے مریضوں کی تعداد دو لاکھ 58 ہزار099 ہوگئی۔

این سی اوسی کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں میں 20 ہزار461 ٹیسٹ کیے گئے، ملک بھرمیں اب تک 20 لاکھ 79 ہزار333 ٹیسٹ ہو چکے، ‏ملک بھرکے اسپتالوں میں 163 مریض وینٹی لیٹرپر ہیں، اسپتالوں میں کورونا وینٹی لیٹرزکی تعداد 1859 ہے، ملک بھر میں 735 اسپتالوں میں کورونا مریضوں کے لیے سہولیات ہیں، اس وقت 1 ہزار294 مریض اسپتالوں میں داخل ہیں۔

این سی اوسی کے مطابق سندھ میں کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثرہ مریضوں کی تعداد ایک لاکھ 22 ہزار759 ہوگئی، پنجاب میں مریضوں کی تعداد 94 ہزار سے زائد رپورٹ، کے پی میں کورونا وائرس سے متاثرمریضوں کی تعداد 34432 ، بلوچستان میں تعداد 11821، اسلام آباد میں کورونا سے متاثرہ مریضوں کی تعداد 15182، آزاد جموں وکشمیر2124، گلگت میں 2287 ہوگئی۔

کورونا وائرس اوراحتیاطی تدابیر:

کورونا وائرس کے خلاف یہ احتیاطی تدابیر اختیار کرنے سے اس وبا کے خلاف جنگ جیتنا آسان ہوسکتا ہے۔ صبح کا کچھ وقت دھوپ میں گزارنا چاہیے، کمروں کو بند کرکے نہ بیٹھیں بلکہ دروازہ کھڑکیاں کھول دیں اور ہلکی دھوپ کو کمروں میں آنے دیں۔ بند کمروں میں اے سی چلاکر بیٹھنے کے بجائے پنکھے کی ہوا میں بیٹھیں۔

سورج کی شعاعوں میں موجود یو وی شعاعیں وائرس کی بیرونی ساخت پر ابھرے ہوئے ہوئے پروٹین کو متاثر کرتی ہیں اور وائرس کو کمزور کردیتی ہیں۔ درجہ حرارت یا گرمی کے زیادہ ہونے سے وائرس پر کوئی اثر نہیں ہوتا لیکن یو وی شعاعوں کے زیادہ پڑنے سے وائرس کمزور ہوجاتا ہے۔

پانی گرم کرکے تھرماس میں رکھ لیں اور ہر ایک گھنٹے بعد آدھا کپ نیم گرم پانی نوش کریں۔ وائرس سب سے پہلے گلے میں انفیکشن کرتا ہے اوروہاں سے پھیپھڑوں تک پہنچ جاتا ہے، گرم پانی کے استعمال سے وائرس گلے سے معدے میں چلا جاتا ہے، جہاں وائرس ناکارہ ہوجاتا ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔