موٹروے زیادتی کیس کا مرکزی ملزم تیسری بار بھی پولیس چھاپے سے قبل فرار

ویب ڈیسک  جمعـء 18 ستمبر 2020
ننکانہ صاحب کے جنگل میں سرچ آپریشن جاری، ملزم شیخوپورہ اور قصور میں بھی چھاپے سے کچھ دیر قبل فرار ہوچکا ہے (فوٹو: فائل)

ننکانہ صاحب کے جنگل میں سرچ آپریشن جاری، ملزم شیخوپورہ اور قصور میں بھی چھاپے سے کچھ دیر قبل فرار ہوچکا ہے (فوٹو: فائل)

 لاہور: موٹروے زیادتی کیس کا مرکزی ملزم عابد تیسری بار بھی پولیس چھاپے سے قبل ننکانہ صاحب سے فرار ہوگیا، ملزم کی گرفتاری کے لیے ننکانہ صاحب میں سرچ آپریشن جاری ہے۔

ایکسپریس کے مطابق موٹر وے زیادتی کیس کے مرکزی ملزم عابد ملہی کی گرفتاری کے لیے پولیس کا چھاپہ ایک بار پھر ناکام ہوگیا، ملزم کو پکڑنے کے لیے پنجاب کے تمام اضلاع کے آر پی اوز اور ڈی پی اوز کو الرٹ کردیا گیا۔

پولیس ذرائع کے مطابق زیادتی کیس کے مرکزی ملزم عابد کی ننکانہ میں موجودگی کی اطلاع مقامی شہری کی جانب سے ون فائیو پر کال کرکے دی گئی لیکن پولیس کے پہنچنے سے قبل ملزم عابد تیسری بار فرار ہوگیا۔ قبل ازیں ملزم کی گرفتاری کے لیے شیخوپورہ اور قصور کے بعد ننکانہ صاحب میں بھی چھاپہ ناکام رہا ہے۔

یہ پڑھیں : موٹروے زیادتی کیس؛ مرکزی ملزم عابد کی بیوی نے پولیس کو ابتدائی بیان دے دیا 

ذرائع کے مطابق ننکانہ صاحب ایلیٹ فورس اور مختلف تھانوں کی نفری نے دولر والا قبرستان کو گھیرے میں لے لیا۔ ننکانہ صاحب میں گھنے جنگل ہونے کی وجہ سے پولیس کو ملزم کی تلاش میں دشواری کا سامنا ہے۔ ڈی پی او ننکانہ صاحب اسماعیل کھاڑک کی زیر نگرانی علاقے میں سرچ آپریشن جاری ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ہر بار ملزم کے چھاپوں سے پہلے فرار ہونے سے سیکیورٹی اداروں کی ساکھ پر سوالیہ نشان پیدا ہوگیا ہے اور اس بات کا خدشہ ہے کہ ملزم کو چھاپے سے قبل آگاہ کردیا گیا ہو۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔