قیدی بھی انسان ہیں،بنیادی حقوق کاتحفظ کیا جائے، چیف جسٹس

آن لائن  منگل 24 دسمبر 2013
 آئی جی جیل خانہ جات کوانکوائری رپورٹ مکمل کرکے سپریم کورٹ میں جمع کرانے کا حکم  ۔فوٹو: فائل

آئی جی جیل خانہ جات کوانکوائری رپورٹ مکمل کرکے سپریم کورٹ میں جمع کرانے کا حکم ۔فوٹو: فائل

لاہور: چیف جسٹس پاکستان جسٹس تصدق حسین جیلانی نے ریمارکس دیے ہیں کہ قیدی بھی انسان ہوتے ہیں ان کے بنیادی حقوق کا تحفظ کیا جائے۔

سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں کوٹ لکھپت جیل میں خواتین قیدیوں کے کھانے سے چھپکلی برآمدگی کیس کی سماعت ہوئی۔ آئی جی جیل خانہ جات عدالت میں پیش ہوئے اور انھوں نے بتایا کہ ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ سمیت 8 اہلکاروں کو معطل کر دیا گیا ہے چیف جسٹس نے آئی جی جیل خانہ جات کوانکوائری رپورٹ مکمل کرکے عدالت میں جمع کرانے کا حکم دیا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔