امریکی بحریہ کا پہلی بار سمندر سے خلا میں بین البراعظمی میزائل تباہ کرنے کا تجربہ

ویب ڈیسک  بدھ 18 نومبر 2020
امریکی بحریہ نے پہلی مرتبہ انٹرسیپٹر میزائل کے ذریعے خلا میں موجود آئی سی بی ایم کو کامیابی سے تباہ کیا ہے۔ فوٹو: میزائل ڈیفینس ایجنسی

امریکی بحریہ نے پہلی مرتبہ انٹرسیپٹر میزائل کے ذریعے خلا میں موجود آئی سی بی ایم کو کامیابی سے تباہ کیا ہے۔ فوٹو: میزائل ڈیفینس ایجنسی

پینٹاگون: امریکی بحریہ نے اپنی تاریخ میں پہلی بار سمندر سے ایک میزائل شکن میزائل (انٹرسپیٹر) لانچ کیا ہے۔ اس سسٹم سے خلا میں موجود بین البراعظمی میزائل یا ( آئی سی بی ایم) کو تباہ کردیا گیا ہے۔

اس عمل کے لیے امریکی بحریہ نے میزائل ڈیفنس ایجنسی کے تعاون سے ایک ایس ایم تھری ٹو اے کی بدولت خلا تک پہنچ جانے والے میزائل کو تباہ کیا۔ پینٹاگون کے مطابق یہ تجربہ 17 نومبرکو کیا گیا تھا۔ دفاعی ماہرین کے مطابق شمالی کوریا بارہا مرتبہ بین البراعظمی میزائلوں کا تجربہ کرچکا ہے اور اسے امریکا پر گرانے کی دھمکیاں بھی دے چکا ہے۔ اسی تناظر میں امریکی دفاعی اداروں بالخصوص میزائل ڈیفنس ایجنسی (ایم ڈی اے) نے یہ ٹیسٹ کیا ہے۔

امریکی جزیرے ہوائی کے شمال مشرق میں واقع رونالڈ ریگن میزائل ڈیفنس سسٹم کی تنصیبات سے یہ تجربہ کیا گیا اور اس میں میزائل انٹرسیپٹر ہر طرح سے کامیاب رہا۔

اسے ایجز بی ایم ڈی نامی ایک بحری جنگی جہاز سے لانچ کیا گیا تھا۔ اگرچہ یہ اپنی نوعیت کا چھٹا تجربہ تھا لیکن بحری جہاز سے آئی سی بی ایم کو مارگرانے کا پہلا تجربہ تھا۔ اگرچہ یہ تجربہ اس سال مئی میں ہونا تھا لیکن کووڈ 19 کی وبا کے سبب اس میں تاخیر ہوئی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔