وفاقی حکومت کا پی ڈی ایم کا لاہور جلسہ نہ روکنے کا اعلان

ویب ڈیسک  منگل 1 دسمبر 2020
 کسی کو بھی جلسے سے نہیں روکیں گے، وفاقی وزیرِ اطلاعات و نشریات شبلی فراز

کسی کو بھی جلسے سے نہیں روکیں گے، وفاقی وزیرِ اطلاعات و نشریات شبلی فراز

 اسلام آباد /  لاہور: وفاقی حکومت نے حزب اختلاف کے اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کا لاہور جلسہ نہ روکنے کا اعلان کردیا۔

وفاقی وزیرِ اطلاعات و نشریات شبلی فراز نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ جلسے جلوسوں پر پابندی ہے لیکن پی ڈی ایم کا لاہور جلسہ نہیں روکیں گے بلکہ کسی کو بھی جلسے سے نہیں روکیں گے، عوام ان لوگوں کا خود احتساب کریں گے۔

شبلی فراز نے کہا کہ اپوزیشن جماعتیں اپنی کرپشن بچانے کے لیے ناٹک کر رہی ہیں، پاکستان سمیت دنیا بھر میں کورونا کی دوسری لہر جاری ہے لیکن ملک میں کھلم کھلا ایس او پیز کی خلاف ورزی کی جا رہی ہے ، یہ سلسلہ جاری رہا تو مسائل بڑھیں گے۔

شبلی فراز کا کہنا تھا کہ کورونا کی دوسری لہر کےدوران ایس اوپیز پرعملدرآمد یقینی بنانا ہوگا، ایسے وقت میں جلسے نہ معیشت کے مفاد میں ہیں نہ ملک کے، بلکہ یہ جلسے صحت عامہ کو خطرات سے دوچار کررہے ہیں۔

شبلی فراز نے کہا کہ اپوزیشن جلسے جلوسوں پر پابندی کے باوجود عوام کو کورونا میں جھونک رہی ہے، کل ملتان کا جلسہ مکمل طور پر ناکام تھا، اور اس میں بھی مریم نواز سمیت تمام رہنماؤں نے جھوٹ بولے،  ملتان کے عوام نے پی ڈی ایم کا بیانیہ مسترد کردیا اور اس میں شرکت نہیں کی، اس جلسے کے لیے 3 ہزار لوگ سندھ سےلائے گئے تھے، اس وبا میں ضابطہ کار کی خلاف ورزی جاری رہی تو مسائل بڑھیں گے۔

لاہور انتظامیہ کا جلسے کی اجازت سے انکار

دوسری جانب لاہور انتظامیہ نے  پی ڈی ایم کو جلسے کی اجازت دینے سے انکار کردیا۔ ڈپٹی کمشنر لاہور مدثر ریاض نے کہا کہ 13 دسمبر کو پی ڈی ایم کو جلسے کی اجازت نہیں دے رہے کیونکہ حکومت کی جانب سے پنجاب بھر میں جلسوں پر پابندی ہے۔

ڈپٹی کمشنر لاہور نے مزید کہا کہ مسلم لیگ نون کی جانب سے جلسے کی درخواست موصول ہوئی ہے لیکن کورونا کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر اجازت نہیں دی جاسکتی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔