عدالتی حکم پرحیسکو نے واسا کو بجلی فراہم کرنا شروع کردی

ویب ڈیسک  جمعرات 26 دسمبر 2013
لطیف آباد اور شہر کے متعدد علاقوں میں فراہمی آب کا عمل رک گیا، عوام شدید پریشان۔ فوٹو:فائل

لطیف آباد اور شہر کے متعدد علاقوں میں فراہمی آب کا عمل رک گیا، عوام شدید پریشان۔ فوٹو:فائل

حیدرآباد: سندھ ہائیکورٹ کے حکم پر حیسکو نے واسا کے منقطع کنکشن بحال کردیئے جس کے بعد شہر میں پانی کی فراہمی کا عمل شروع ہوگیا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق حیدرآباد الیکٹرک سپلائی کمپنی نے 6 ارب 50 کروڑ روپے سے زائد کے واجبات کی عدم ادائیگی پر واسا کے بجلی کنکشن منتقطع کر دیئے تھے جس کے نتیجے میں شہر بھر میں پانی کی شدید قلت پیدا ہوگئی، حیسکو نے بدھ کے روز واسا کے 5 فلٹر پلانٹس اور 20 سے زائد سیوریج پمپنگ اسٹیشنز کے کنکشن منقطع کئے تھے جس سے لطیف آباد اور شہر کے متعدد علاقوں میں فراہمی آب کا عمل رک گیا تھا جبکہ کئی علاقوں میں گٹر کا پانی بھی سڑکوں پر جمع ہونا شروع ہوگیا تھا تاہم سندھ ہائیکورٹ کے حکم پر حیسکو نے واسا کی بجلی بحال کردی۔

ترجمان حیسکوصادق کُبر کے مطابق واسا کے 202 میں سے 36 کنکشن منقطع کئے گئے تھے جنہیں عدالتی احکامات موصول ہونے پر بحال کردیا گیا ہے تاہم واسا کو اب بھی 6 ارب 50 کروڑ روپے سے زائد واجبات کی ادائیگی کرنا ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔