درگاہ پر 3 افراد کا قتل، اسحاق عرف بوبی کو 6 بار سزائے موت کا حکم

کورٹ رپورٹر  جمعرات 14 جنوری 2021
کالعدم تنظیم کے مجرم نے 2014ء میں زمان ٹاؤن میں نذر شاہ درگاہ پر حملہ کیا اور 3 شہری کو قتل کیا (فوٹو : فائل)

کالعدم تنظیم کے مجرم نے 2014ء میں زمان ٹاؤن میں نذر شاہ درگاہ پر حملہ کیا اور 3 شہری کو قتل کیا (فوٹو : فائل)

 کراچی: انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے درگاہ پر حملہ کرکے 3 افراد کے قتل اور اے ٹی ایکٹ کے مقدمات میں کالعدم تنظیم کے ہائی پروفائل کارندے مجرم اسحاق عرف بوبی کو مجموعی طور پر 6 مرتبہ سزائے موت کا حکم دے دیا۔

کراچی سینٹرل جیل میں انسداد دہشت گردی کمپلیکس میں خصوصی عدالت نمبر 16 نے درگاہ پر حملے کرکے 3 افراد کے قتل کرنے کے مقدمے کا فیصلہ سنادیا۔ کالعدم تنظیم کے ہائی ہروفائل کارندے مجرم اسحاق بوبی پر ایک اور جرم ثابت ہوگیا۔ عدالت نے مجرم اسحاق بوبی کو 3 افراد کے قتل میں مجموعی طور پر 6 مرتبہ سزائے موت کا حکم سنادیا۔

عدالت نے مجرم اسحاق بوبی کو 3 افراد کے قتل میں تین بار اور انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت 3 مرتبہ سزائے موت سنائی۔ عدالت نے اسحاق بوبی کو دہشت گردی ایکٹ میں مزید 10 سال قید کا بھی حکم دیا ہے۔ عدالت نے مجرم کو مقتول کے لواحقین فی کس 4 لاکھ روپے جرمانے کا بھی ادا کرنے کا حکم دیا گیا ہے ساتھ ہی عدالت نے مجرم کی جائیداد ضبط کرنے کا بھی حکم دے دیا۔

پولیس کے مطابق مجرم نے 23 اگست 2014ء کو زمان ٹاؤن کے علاقے میں مفرور ساتھی کے ہمراہ نذر شاہ درگاہ پر حملہ کیا۔ حملے میں 3 شہری زاہد حسین، نواز اور یونس جاں بحق ہوئے۔ مجرم اور اس کے مفرور ساتھی کے خلاف زمان ٹان میں تھانے مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔