بابر اعظم نے بطور 34ویں ٹیسٹ کپتان میدان سنبھال لیا

ویب ڈیسک  منگل 26 جنوری 2021
مصباح کامیاب ترین قائد، باہمی مقابلوں میں جنوبی افریقہ کو واضح برتری۔ فوٹو: فائل

مصباح کامیاب ترین قائد، باہمی مقابلوں میں جنوبی افریقہ کو واضح برتری۔ فوٹو: فائل

 لاہور:  بابر اعظم آج 34ویں پاکستانی ٹیسٹ کپتان کے طور پر میدان میں اترے۔ 

پاکستانی ٹیسٹ کرکٹ تاریخ کے پہلے کپتان عبدالحفیظ کاردار تھے، انھوں نے 1952سے 1958تک 23میچز میں ٹیم کی کمان سنبھالی اور 6 فتوحات حاصل کیں، اتنے ہی مقابلوں میں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔

اس سفر میں کامیاب ترین کپتان کا اعزاز قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق کو حاصل ہے، انھوں نے 56میچز میں سب سے زیادہ 26فتوحات سمیٹیں، 19میں ناکامی ہوئی،11میچز ڈرا ہوئے، عمران خان اور جاوید میانداد نے 14، 14 مقابلوں میں کامیابی حاصل کی۔

دورہ نیوزی لینڈ میں بابر اعظم کی انجری کے سبب محمد رضوان کو پہلی بار قومی ٹیسٹ ٹیم کی قیادت کا موقع ملا،منگل کو بابر اعظم 34ویں کپتان کے طور پر میدان میں اتریں گے، دوسری جانب پاکستان اور جنوبی افریقہ کے 26باہمی میچز میں سے 15میں پروٹیز نے فتح سمیٹی، صرف 4 میں گرین کیپس سرخرو جبکہ 7 مقابلے ڈرا ہوئے۔

پاکستان نے ابھی تک 7ٹیسٹ میں جنوبی افریقہ کی میزبانی کرتے ہوئے صرف ایک جیتا، 2 میں شکست جبکہ 4 میچز ڈرا ہوگئے، نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں صرف ایک ٹیسٹ2007 میں کھیلا گیا جس میں پروٹیز نے کامیابی حاصل کی۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔