عراق میں امریکی فضائی اڈے پر 10 راکٹ حملے

ویب ڈیسک  بدھ 3 مارچ 2021
راکٹس حملے نامعلوم مقام سے کیئے گئے، فوٹو : فائل

راکٹس حملے نامعلوم مقام سے کیئے گئے، فوٹو : فائل

 بغداد: عراق میں امریکی قیادت میں قائم عسکری اتحاد کے فضائی اڈے پر نامعلوم مقام سے 13 راکٹس داغے گئے جن میں سے 10 بیس کے مرکزی حصے میں گرے۔ 

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق عراق کے صوبے انبار میں امریکی قیادت میں قائم عسکری اتحاد کے فوجی اڈے ’’ عین الاسد‘‘ میں 10 راکٹ آکر گرے جس سے عمارت کے کچھ حصے کو شدید نقصان پہنچا تاہم کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

یہ خبر پڑھیں : امریکی جنگی طیاروں کی شام میں ایرانی ٹھکانوں پر بمباری، 17 جنگجو ہلاک 

عسکری اتحاد کے ترجمان کرنل ویئن ماروٹو نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر لکھا کہ یہ حملہ علی الصبح کیا گیا جس کا بھرپور جواب دیا گیا۔ حملہ آوروں سے متعلق تفتیش جاری ہے، جلد حقائق بتائے جائیں گے۔

فوجی اڈے پر حملہ اُس وقت کیا گیا ہے جب امریکا کی طرف سے گزشتہ ہفتے عراق اور شام کی سرحد کے قریب ایرانی حمایت یافتہ ملیشیا گروپ کے اہداف کو نشانہ بنایا گیا تھا۔

یہ خبر بھی پڑھیں : عراق میں امریکی فوجی اڈے پر 12 راکٹ حملے

واضح رہے کہ 16 فروری کو امریکی فوجی اڈے پر حملہ کیا گیا تھا جس کے نتیجے میں ایک غیر ملکی سویلین کنٹریکٹر ہلاک اور امریکی فوجی زخمی ہوگیا تھا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔