کراچی میں 14 سالہ لڑکی سے اجتماعی زیادتی کے چاروں ملزمان گرفتار

اسٹاف رپورٹر  ہفتہ 10 اپريل 2021
چاروں ملزمان کی عمریں 14 سے 15 سال کے درمیان ہیں، ایس ایچ او میمن گوٹھ (فوٹو : فائل)

چاروں ملزمان کی عمریں 14 سے 15 سال کے درمیان ہیں، ایس ایچ او میمن گوٹھ (فوٹو : فائل)

 کراچی: میمن گوٹھ پولیس نے 14 سالہ لڑکی سے اجتماعی زیادتی کے واقعے کا مقدمہ زیادتی، جان سے مارنے کی دھمکی دینے اور دہشت گردی کی دفعہ کے تحت درج کرتے ہوئے نامزد چار ملزمان کو گرفتار کرلیا۔

رات گئے میمن  گوٹھ پولیس نے 14 سالہ لڑکی سے اجتماعی زیادتی کے واقعے  کا مقدمہ الزام نمبر21/133 بجرم دفعہ 376 آئی آئی ، 34/506 بی اور دہشت گردی کی دفعہ 7 اے ٹی اے کے تحت متاثرہ لڑکی کے والد جاوید احمد کی مدعیت میں درج کیا۔

مقدمے میں 4 ملزمان عدیل ولد عبدالستار، مزمل ولد ذاکرحسین، سبحان ولد محمد عباس اور آرض ولد حمید کو نامزد کیا گیا، ایف آئی آر کے متن کے مطابق متاثرہ لڑکی کے والد پرائمری اسکول ٹیچر ہیں اور انھوں نے پولیس کو بیان دیا کہ ان کی بیٹی سے متعلق نازیبا افواہیں پھیلنے لگیں کہ ان کی بیٹی کو 4 ملزمان نے اجتماعی زیادتی کانشانہ بنایا ہے جس کی واٹس ایپ  گروپ پر ویڈیو وائرل ہوئی ہے، ایک اہل محلہ نے وہ ویڈیو انہیں دکھائی تو انھوں نے اپنی بیٹی سے حقیقت معلوم کی۔

ان کی بیٹی نے بتایا کہ رواں سال 12 جنوری کو مزمل، عدیل، سبحان اور ارض نے نہ صرف زیادتی کا نشانہ بنایا بلکہ ملزم عدیل نے ویڈیو بھی بنائی اوریہ بات کسی کونہ بتانے کے  لیے کہا کہ اگر تم نے یہ بات اپنے والدین یا کسی اورشخص کو بتائی تو جان سے ماردیں گے جس سے میں خوف زدہ ہو گئی اور ڈر کی وجہ سے کسی بھی گھر کے فرد سے ذکر نہیں کیا جب میری یہ ویڈیو واٹس ایپ پرآئی تو میں یہ حقیقت بتا رہی ہوں۔

متاثرہ لڑکی کے والد کا کہنا ہے کہ یہ بات سن کر سکتے میں آگئے اور پریشان ہوگئے، اب میں تھانہ رپورٹ کرنے آیا ہوں اوراب میں ان ملزمان کے خلاف قانونی کارروائی چاہتا ہوں لہذا ان کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے پولیس نے مقدمہ درج کر نے کے بعد تفتیش اینٹی وائلنٹ کرائم سیل کو منتقل کردی۔

ملزمان کی عمریں 14 سے 15 سال کے درمیان ہیں

دریں اثنا میمن گوٹھ پولیس نے مقدمہ درج ہونے کے بعد چند گھنٹوں میں 14 سالہ لڑکی کے ساتھ زیادتی کرنے والے چاروں ملزمان کو گرفتار کرلیا۔ایس ایچ او میمن گوٹھ خالد عباسی کے مطابق گرفتار ملزمان میں مزمل، عدیل، سبحان اور آرض شامل ہیں، چاروں ملزمان کی عمریں 14 سے 15 سال کے درمیان ہیں۔

ایس ایچ او کے مطابق چاروں ملزمان نے میمن گوٹھ کی رہائشی 14 سالہ (ح ) کو 13 جنوری کو بہانے سے گھر میں بلاکر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد لڑکی کو اسلحے کی نوک پر دھمکی دی تھی، واقعے کا ذکر کسی سے کیا تو گولی ماردیں گے، متاثرہ لڑکی نے 3 ماہ تک خوف کے باعث واقعے کا ذکر کسی سے نہیں کیا اور چپ سادھ لی۔

گھروالوں کو شبہ ہوا تو انھوں نے (ح) کو دلاسہ دیا جس پر متاثرہ لڑکی نے اہل خانہ کو پورا واقعہ بتایا۔ لڑکی کے والد نے میمن گوٹھ تھانے میں چاروں ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرادیا، پولیس نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے ملزمان کو گرفتار کرلیا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔