اسلام آباد ہائیکورٹ کا افتخار محمد چوہدری کو آج ہی بلٹ پروف گاڑی فراہم کرنے کا حکم

ویب ڈیسک  بدھ 15 جنوری 2014
عدالت نے حکومت کو اس سلسلے میں 90 دن کی پابندی کی شق ختم کرنے کا بھی حکم دیا ہے۔   فوٹو:فائل

عدالت نے حکومت کو اس سلسلے میں 90 دن کی پابندی کی شق ختم کرنے کا بھی حکم دیا ہے۔ فوٹو:فائل

اسلام آباد: ہائی کورٹ نے حکومت کو سابق چیف جسٹس پاکستان افتخار محمد چودھری کو آج ہی بلٹ پروف گاڑی فراہم کرنے کا حکم دیا ہے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے جج جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے سابق چیف جسٹس کوسیکیورٹی دینے سے متعلق کیس کی سماعت کی اور حکومت کو حکم دیا کہ سابق وزرائے اعظم کی طرح سابق چیف جسٹس افتخار محمد چودھری کو بھی بلٹ پروف گاڑی دی جائے اور عدالتی حکم پر آج ہی عمل کیا جائے،  عدالت نے اپنے حکم میں کہا کہ افتخار محمد چودھری کو سیکیورٹی کے لئے جو بلٹ پروف گاڑی دی جائے گی وہ ان کے اہل خانہ بھی استعمال کر سکیں گے۔ عدالت نے حکومت کواس سلسلے میں 90 دن کی پابندی کی شق ختم کرنے کا بھی حکم دیا ہے۔

جسٹس شوکت صدیقی نے آئی جی اسلام آباد پولیس کو ہدایت کی ہے کہ وہ سابق چیف جسٹس کی سیکیورٹی پر ماموراہلکاروں کی تعداد میں بھی اضافہ کریں۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔