کراچی:ٹینکرز،کنٹینرزاورٹریلرزافغان ٹرانزٹ پرآپریشنل کے منتظر

ایکسپریس اردو  پير 9 جولائ 2012
قانونی امورطے ہونے پرنیٹوکوپٹرولیم مصنوعات جلدبحال ہوجائینگی،آئل ٹینکرزایسوسی ایشن

قانونی امورطے ہونے پرنیٹوکوپٹرولیم مصنوعات جلدبحال ہوجائینگی،آئل ٹینکرزایسوسی ایشن

کراچی: نیٹوافواج کوکراچی سے پٹرولیم مصنوعات اورکارگوکنٹینرزکی بحالی اگلے ہفتے سے ممکن ہے،آئل ٹینکرز،کارگوکنٹینرزاورٹریلرزافغان ٹرانزٹ پر آپریشنل کیلیے منتظرکھڑے ہیں تاہم اب تک متعلقہ کمپنیوں اورنیٹوحکام میں مختلف امورپربات ہورہی ہے۔

حتمی معاہدے کے بعدامکان ہے یہ سپلائی اگلے ہفتے سے بحالی ہوجائے گی۔آل پاکستان آئل ٹینکرزاونرزایسوسی ایشن کے ترجمان اسرارشنواری نے کہاہے کہ نیٹوکیلیے پٹرولیم مصنوعات کی بحالی کیلیے نیٹوحکام اورپی ایس او میں معاہدہ ہوناباقی ہے جس میں ریٹس اوردیگرقانونی معلامات طے کیے جائیںگے،توقع ہے کہ یہ قانونی کارروائی منگل تاجمعرات ممکن ہوجائے گی جس کے بعد پی ایس اوکی جانب سے آئل ٹینکرز آپریٹرزسے ٹینکرز کے کرایے اوردیگرقانونی معاملات طے کیے جائیں گے،

ہمارے4ہزارآئل ٹینکرزنیٹو افواج کوپٹرولیم مصنوعات فراہم کرتے ہیں،توقع ہے کہ اہم امورجلدازجلدطے ہوجائیںگے اوراگلے ہفتے پٹرولیم مصنوعات نیٹوافواج کوبحال ہوجائینگی۔پاکستان ٹرانسپورٹ فیڈریشن کے جنرل سیکریٹری حنیف خان مروت نے کہاہے کہ نجی ٹرانسپورٹ کمپنیاں نیٹوحکام سے بات چیت کررہی ہیں جس میں ڈیٹینشن چارجز، کرایہ جات ،واجبات اوردیگر معاملات حل کیے جارہے ہیں،اب تک 50فیصد معاملات حل ہوچکے اورتوقع ہے کہ بقیہ 50فیصد مسائل چنددنوں میں حل کرلیے جائیں گے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔