پسماندہ اضلاع میں ترجیحی بنیادوں پر ماہر ڈاکٹرز کی تعیناتی کا فیصلہ

شاہدہ پروین  اتوار 25 جولائ 2021
ڈاکٹروں کو ایک سے دو سال کی مدت کا تعین کیا جائے گا فوٹو: فائل

ڈاکٹروں کو ایک سے دو سال کی مدت کا تعین کیا جائے گا فوٹو: فائل

 پشاور: محکمہ صحت خیبرپختونخوا نے صوبے کے 7 پسماندہ اضلاع میں ترجیحی بنیادوں پر اسپیشلسٹ ڈاکٹرز کی تعیناتی کا فیصلہ کیا ہے، جس کے لئے باضابطہ منصوبہ بندی کا آغاز کردیا گیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ محکمہ صحت خیبرپختونخوا نے چترال، کوہستان، تورغر، ٹانک، شانگلہ، لکی مروت، اور بٹگرام میں اسپشلسٹ ڈاکٹرز کی خالی آسامیوں پر تعیناتی کے لئے ڈی ایچ اوز سے تفصیلات طلب کی ہیں۔ اس سلسلے میں بتایا جارہا ہے کہ جن ڈاکٹرز کی ٹریننگ مکمل ہوجائے گی اانہیں ان اضلاع کی خالی آسامیوں پر تعینات کیا جائے گا۔ ڈاکٹروں کو ایک سے دو سال کی مدت کا تعین کیا جائے گا جس کے بعد اسپشلسٹ کیڈر کی صورت میں ڈاکٹروں کی تعنیاتی عمل میں لائی جائے گی۔

ذرائع کا کہنا ہے محکمہ صحت نے ان اضلاع میں تمام منظور شدہ آسامیوں، ٹریننگ پر موجود ڈاکٹرز اور اسپتالوں و طبی مراکز کو درکار عملے کے حوالے سے بھی جائزہ لینا شروع کردیا ہے۔ ڈی ایچ اوز سے رپورٹس موصول ہونے کے بعد اس حوالے سے باضابطہ حتمی فیصلہ کیا جائے گا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔