نور مقدم کیس میں پیش رفت، ملزم کے والدین کی درخواستیں مسترد

ویب ڈیسک  بدھ 28 جولائ 2021
مرکزی ملزم کے والد ذاکر جعفر اور والدہ عصمت نے پولیس کے خلاف حبس بے جا میں رکھنے کی درخواست دائر کی تھی۔

مرکزی ملزم کے والد ذاکر جعفر اور والدہ عصمت نے پولیس کے خلاف حبس بے جا میں رکھنے کی درخواست دائر کی تھی۔

 اسلام آباد: سیشن عدالت نے مرکزی ملزم ظاہر جعفر کے والدین کی پولیس کے خلاف حبس بے جا میں رکھنے کی درخواستیں مسترد کردیں۔

اسلام آباد کے سیشن جج ویسٹ کامران بشارت مفتی نے ڈیوٹی مجسٹریٹ کے ریمانڈ کے آرڈر کو کالعدم قرار دینے کی درخواست بھی مسترد کردی۔

مرکزی ملزم کے والد ذاکر جعفر اور والدہ عصمت نے عبوری ضمانت کے باوجود گرفتاری پر پولیس کے خلاف حبس بے جا میں رکھنے کی درخواست دائر کی تھی۔

یہ بھی پڑھیں: نور مقدم کیس میں کال ریکارڈ مل گیا، ملزم والدین سے مکمل رابطے میں تھا

سیشن عدالت نے فیصلہ سنایا کہ 24 جولائی کو ایک لاکھ روپے مچلکوں کے عوض ملزمان کی ضمانت ہوئی ، لیکن مچلکے جمع ہی نہیں ہوئے تو پولیس کیسے معلوم ہو گا کہ ضمانت ہوچکی، بنک بند ہونے کی صورت میں ملزمان عدالت کے اکاؤنٹنٹ کو رقم جمع کرا سکتے تھے، لہذا حبس بے جا میں رکھنے اور ریمانڈ آرڈر کے خلاف درخواست مسترد کی جاتی ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔