ساجد سدپارہ نے پھرK.2 سر کرلی، والد کو کیمپ فور میں دفنا دیا

سرور سکندر  جمعرات 29 جولائ 2021
 ساجد سدپارہ کی جانب سے کے ٹو سر کرنے کے بعد چوٹی پر قومی پرچم لہرایا گیا ہے ۔  فوٹو : ایکسپریس

ساجد سدپارہ کی جانب سے کے ٹو سر کرنے کے بعد چوٹی پر قومی پرچم لہرایا گیا ہے ۔ فوٹو : ایکسپریس

اسکردو:  ساجد سدپارہ نے دوسری مرتبہ بغیر آکسیجن کے8611میٹر دنیا کی دوسری بلند ترین چوٹی کے ٹو سر کرلی۔

ساجد سدپارہ اپنے مرحوم والد معروف کوہ پیما علی سدپارہ کا جسدخاکی ڈھونڈنے کی مہم پر تھے، انہوں نے دوسری مرتبہ بغیر آکسیجن کے8611میٹر دنیا کی دوسری بلند ترین چوٹی کے ٹو سر کرلی۔ اس مہم میں معروف کینیڈین فلم میکر ایلیا سیکلی اور نیپالی شیرپا بھی ان کے ساتھ تھے۔

کے ٹو سر کرنے کے بعد ٹاپ سے آڈیو پیغام میں ساجد سدپارہ نے مہم کی کامیابی کے لیے دعا اور نیک خواہشات کا اظہار کرنے پر قوم کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ والد مرحوم کا جسد خاکی نیچے لانا ممکن نہیں۔

بعد ازاں وہ  جسد خاکی بوتل نیک سے ارجنٹائن کے کوہ پیما کی مدد سے کیمپ فور میں لائے اور تدفین کردی، ساجد سدپارہ نے  قوم سے  اپنے والد کی  مغفرت کے لیے دعا کرنے کی اپیل کی ہے۔

 

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔