وزیراعظم آزاد کشمیر کا فیصلہ استخارے اور زائچے کی بنیاد پر ہوا

ویب ڈیسک  بدھ 4 اگست 2021
نومنتخب وزیراعظم آزاد کشمیر قیوم نیازی اس عہدے کی دوڑ میں ہی شامل نہیں تھے

نومنتخب وزیراعظم آزاد کشمیر قیوم نیازی اس عہدے کی دوڑ میں ہی شامل نہیں تھے

 اسلام آباد: پارلیمانی حلقوں میں نئی بحث شروع ہوگئی کہ قیوم نیازی کیسے وزیراعظم آزاد کشمیر منتخب ہوگئے۔

نومنتخب وزیراعظم آزاد کشمیر قیوم نیازی اس عہدے کے امیدواران میں ہی شامل نہیں تھے اور انہیں کسی رسمی انٹرویو میں بھی نہیں بلایا گیا تھا، کیونکہ بطور امیدوار سردار تنویر الیاس، بیرسٹر سلطان، خواجہ فاروق اور اظہر صادق کا انٹرویو ہوا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: تحریک انصاف کے عبدالقیوم نیازی وزیراعظم آزاد کشمیر منتخب

ذرائع کے مطابق قیوم نیازی کی بطور وزیراعظم نامزدگی میں دعاوٴں کا اثر زیادہ ہوا، استخارہ اور زائچہ میں ضلع پونچھ کا نام آیا جس پر فیصلہ ہوا، وزیراعظم نے امیدواروں اور پارٹی سیاست کو دیکھتے ہوئے روحانی طریقہ کار کے مطابق فیصلہ کیا، وزیراعظم آزاد کشمیر کی نامزدگی پر انتہائی راز داری سے مشاورت ہوئی اور وزیراعظم عمران خان کے قریبی حلقوں سے مشاورت کے بعد قرعہ ضلع پونچھ کے نام نکلا جس کے باعث ضلع پونچھ کی 7 نشستوں میں حلقہ ایل اے 18 پر اتفاق کیا گیا۔

نومنتخب وزیراعظم قیوم نیازی سے وزیراعظم عمران خان کی عباس پور جلسہ سے پہلے جان پہچان نہیں تھی، جس کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے قیوم نیازی کے نام پر بھی دوران جلسہ ہی تعجب کا اظہار کیا تھا۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔