کراچی میں پانی کے ٹینک سے ماں اور بیٹے کی تشدد زدہ لاشیں برآمد

ویب ڈیسک  منگل 21 ستمبر 2021
شبہ ہے کہ ماں بیٹے کو گھر میں موجود ذہنی معذور بیٹے نے قتل کیا ہے، پولیس۔ (فوٹو: فائل)

شبہ ہے کہ ماں بیٹے کو گھر میں موجود ذہنی معذور بیٹے نے قتل کیا ہے، پولیس۔ (فوٹو: فائل)

 کراچی: سعید آباد کے علاقے سجن گوٹھ میں پانی کے زیر زمین ٹینک سے ماں اور بیٹے کی لاشیں ملیں جنہیں تشدد کے بعد قتل کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق سعید آباد کے علاقے بلدیہ سجن گوٹھ میں پانی کے زیر زمین ٹینک سے ماں اور بیٹے کی لاشیں ملنے کی اطلاع پر پولیس اور ریسکیوعملہ موقع پر پہنچ گیا، پولیس نے جائے وقوعہ کے معائنے کے بعد لاشوں کو سول اسپتال منتقل کردیا۔

اس بابت ایس ایچ او شاکر حسین نے بتایا کہ متوفیہ کی شناخت 55 سالہ چنگائی بی بی زوجہ مردان اور بیٹے کی شناخت 25 سالہ ہمت علی کے نام سے ہوئی، انہوں نے بتایا کہ متوفیہ کا شوہر کافی عرصے قبل انتقال کرچکا ہے، خاتون کے 4 بیٹے ہیں، 2 بیٹے ملازمت کرتے ہیں، 1 بیٹا ذہنی معذور ہے اور 1 بیٹا ہمت علی جس کی لاش ماں کے ساتھ ٹینک میں ملی۔

ان کا کہنا ہے کہ متوفیہ کے 2 بیٹے جب ملازمت سے شام کو گھر واپس آئے تو انہوں نے ماں اور بھائی کی لاش دیکھ کر اہل محلہ کو بتایا،علاقہ مکینوں کی اطلا ع پر ہی پولیس جائے وقو عہ پر پہنچی تھی۔

پولیس کے مطابق ماں اور بیٹے کے سر چوٹ کے نشانات ہیں جن سے ظاہر ہوتا ہے کہ انہیں قتل کرکے لاشیں ٹینک میں پھینکی گئیں۔ مقتولہ کا آبائی تعلق جیکب آباد سے تھا اور یہ انتہائی غریب گھرانہ ہے گھر میں کھانے کے پورے برتن بھی نہیں ہیں۔

پولیس کو شبہ ہے کہ ماں بیٹے کو گھر میں موجود ذہنی معذور بیٹے نے قتل کیا ہے اوروہ اکثر و بیشتر اپنے بھائیوں اور ماں پر تشدد بھی کرتا تھا، اس سلسلے میں پولیس مزید تفتیش کر رہی ہے۔

ایکسپریس میڈیا گروپ اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔